اتوار, جولائی 14, 2024
اشتہار

بینک اکاؤنٹس منجمد : لوگ نقدی لے کر گھومنے لگے

اشتہار

حیرت انگیز

بیروت : لبنان میں معیشت کی حالت انتہائی خراب ہونے کے سبب بینکوں نے کھاتے داروں کی رقوم کو منجمد کردیا، جس کے بعد شہری نقد رقوم میں کاروباری لین دین کررہے ہیں۔

اس صورتحال کے پیش نظر لوگ بھاری نقد رقوم بینکوں کے بجائے گھروں میں رکھنے پر مجبور ہیں، تاجر برادری کا کہنا ہے کہ ٹیکس جمع کرانا بھی بہت مشکل ہے۔

لبنان کے موجودہ معاشی حالات کو 1975 سے 1990 تک جاری رہنے والی خانہ جنگی کے بعد بدترین مالی بحران طور پر دیکھا جارہا ہے اور اس مالیاتی بحران کے سبب لبنان کی کرنسی مسلسل گراوٹ کا شکار رہی ہے۔

- Advertisement -

لبنان میں اب نقد رقم کے لین دین کا رجحان بڑھتا جارہا ہے، جہاں تین سال کی معاشی بدحالی نے ملک کے مالیاتی شعبے کو تباہی کی جانب دھکیل دیا ہے۔

منی ایکسچینج کی دکانوں پر لوگ اپنی تباہ شدہ مقامی کرنسی سے بھرے بڑے بڑے تھیلے بھر کر امریکی ڈالر خریدنے کے لیے قطاروں میں کھڑے رہتے ہیں۔

بینکوں نے اپنے کھاتے داروں کی اکاؤنٹ میں جمع شدہ بلینز ڈالرز کی رقوم کو منجمد کردیا ہے اور ان کی بنیادی خدمات کو بھی روک دیا گیا ہے۔

یہاں کے لوگ کاروباری لین دین کیلئے اب صرف نقد رقم میں کام کرتے ہیں، بینکنگ دستاویزات کے مطابق ستمبر2019 اور نومبر2022 کے درمیان گردش میں مقامی کرنسی میں12 گنا اضافہ ہوا۔

مزید پڑھیں : لبنان میں کئی بینک لوٹ لیے گئے

زیادہ تر ریستوران اور کافی شاپس نے معذرت خواہانہ نوٹس چسپاں کیے ہوئے ہیں جن میں کہا گیا ہے کہ کیش ادائیگی کریں کریڈٹ کارڈز قبول نہیں کیے جائیں گے۔

لبنانی کرنسی کی ویلیو کو چیک کرنے کیلئے شہری موبائل ایپس کا استعمال کرتے ہیں پاؤنڈ نے سال 2019 کے بعد سے اپنی قیمت کی تقریباً 97 فیصد قدر کھو دی ہے۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں