توہینِ عدالت کیس: احسن اقبال کی معافی منظور، کارروائی ختم کردی گئی -
The news is by your side.

Advertisement

توہینِ عدالت کیس: احسن اقبال کی معافی منظور، کارروائی ختم کردی گئی

لاہور: عدالتِ عالیہ نے مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیراحسن اقبال کے خلاف توہینِ عدالت کی کارروائی ختم کردی، انہوں نے گزشتہ سماعت میں عدالت سے غیر مشروط معافی طلب کی تھی۔

تفصیلات کے مطابق عدالت نے احسن اقبال کے خلاف توہینِ عدالت کی کارروائی ختم کرتے ہوئے امید ظاہر کی ہے کہ مستقبل میں ان کی جانب سے اداروں کے احترام کو ملحوظِ خاطر رکھا جائے گا۔

یاد رہے کہ جولائی میں ہونے والی سماعت میں احسن اقبال نے عدالت کے روبرو غیر مشروط معافی طلب کی تھی جسے قبول کرلیا گیا ہے، عدالت نے اپنے ریمارکس میں کہا تھا کہ احسن اقبال کو عزت دیتے ہیں مگرباہر جا کر ایسے بیانات قابل برداشت نہیں ہیں، عدالت کی سماعت ستمبر تک ملتوی کی گئی تھی اور عدالت کی جانب سے اس دوران احسن اقبال کے رویے کا جائزہ لینے کا کہا گیا تھا۔

توہینِ عدالت کیس میں معافی حاصل کرنے کے بعد احسن اقبال کا کہنا تھا کہ ترقی کےلیےتمام اداروں میں ہم آہنگی ضروری ہے ، اگر عدلیہ کمزور ہو گی تو ہر مظلوم کو نقصان ہو گا۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ پارلیمنٹ کی طرح تمام ادارے مقدس ہیں۔

ملک میں توانائی کی صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ توانائی اولین ترجیح نہ ہوتی توآج سول وار جیسی صورتحال ہوتی ، 12ہزار میگا واٹ پیدا کی مگر کسی سے چندہ نہیں مانگا ۔ بین الاقوامی اداروں کے اشتراک کے بغیر ڈیم بنانا عملاً ناممکن ہے، ڈیم بنانا انتہائی اہم ہے اسے سنجیدہ لیا جائے ۔

ان کا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت سی پیک کو سبوتاژ کرنے کے لیے لائی گئی ہے تاہم پوری قوم سی پیک کی حفاظت کرے گی ، انہوں نے اس بات کا بھی عندیہ دیا کہ ان کی جماعت دھرنے اور لاک ڈاؤن نہیں کرے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں