The news is by your side.

لاہورہائی کورٹ نے پسند کی شادی کرنے والی لڑکی کو شوہرکے ساتھ رہنے کی اجازت دے دی

لاہور: ہائی کورٹ نے پسند کی شادی کرنے والی لڑکی کو شوہر کےساتھ جانے کی اجازت دے دی، لڑکی نے بیان میں کہا کہ وہ بالغ ہے اور اپنے شوہر کے ساتھ رہنا چاہتی ہے۔

تفصیلا ت کے مطابق عدالت عالیہ کے روبر حویلی لکھا کی امائمہ بی بی کی درخواست پر سماعت کی گئی ۔درخواست گزار لڑکی نے موقف اپنایا کہ مجھے کسی نے اغواءنہیں کیا بلکہ میں نے اپنی مرضی سے شادی کی ہے۔

عدالت میں دائر کردہ درخواست میں یہ بھی کہا گیا کہ گھر والوں نے میرے شوہر پر اغواءکا مقدمہ درج کروا رکھا ہے، جبکہ وہ اپنی رضامندی سے اپنے شوہر کے ساتھ ہے اور اپنے گھرو الوں کے بجائے اسی کےساتھ جانا چاہتی ہے۔

معزز عدالت سے استدعا ہے کہ شوہر کے ساتھ جانا چاہتی ہوں ،جانے کی اجازت دی جائے۔ عدالت نے فریقین کے دلائل سنے ، شواہد کا جائزہ لیا اور اس کے بعد منطقی نتیجے پر پہنچتے ہوئے لڑکی کے بیان کی روشنی میں اسے شوہر کے ساتھ جانے کی اجازت دیدی ۔

دوسری جانب والدین نے عدالتی فیصلے کے بعد احاطہ عدالت میں چیخ و پکار کی ۔ا س موقع پر لڑکی کی والدہ کا کہنا تھا کہ میری بیٹی کی عمر تیرا سال ہے، وہ کم عمر ہے اور اسے اس طرح کسی کے ساتھ رہنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں