The news is by your side.

Advertisement

مقدمات نمٹانےکےلیےجدیدطریقےاختیارکرناہوں گے‘چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ

لاہور: چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ سید منصور علی شاہ کا کہناہےکہ مقدمات نمٹانےکےلیےجدیدطریقےاختیارکرناہوں گے۔انہوں نےکہاکہ مصالحتی عمل دنیا میں تیزی سےپھیل رہاہے۔

تفصیلات کےمطابق صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ جسٹس منصور علی شاہ نے کہا کہ حکم امتناعی کے کلچر کو بھول جائیں،انہوں نےکہا کہ کوشش ہے کوئی معاملہ زیادہ دیرتک حکم امتناع میں نہ رہے۔

انہوں نےکہا کہ مسئلے بند کمرے میں بھی حل ہوسکتے ہیں،جبکہ عدالتوں میں مقدمات کی پیروی کرتے کرتےلوگ تنگ آچکے ہیں۔

سید منصور علی شاہ کا کہناتھاکہ ہماراکام لوگوں کوانصاف فراہم کرناہے،انہوں نےکہا کہ پنجاب میں اس وقت 13لاکھ کیسزززیر التواہیں،جبکہ لاہورہائی کورٹ میں ایک لاکھ سےزائدکیسززیرالتواہیں۔

مزید پڑھیں:سپریم کورٹ قوم کومایوس نہیں کرے گی،جسٹس ثاقب نثار

اس سے قبل گزشتہ روز چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے کہاتھا کہ عدلیہ آزاد اورخود مختارادارہ ہے، سپریم کورٹ قوم کو مایوس نہیں کرے گی، پاکستان کی عدلیہ دنیا کی کسی عدلیہ سے کم نہیں،ہمیں اپنی عدلیہ پر فخر ہے۔

مزید پڑھیں:قوانین میں نہیں طریقہ کارمیں تبدیلی کی ضرورت ہے،جسٹس آصف سعید کھوسہ

واضح رہےکہ گزشتہ ہفتےسپریم کورٹ کےجسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہاتھا کہ جلد انصاف کی فراہمی کےلیے قوانین میں نہیں طریقہ کار میں تبدیلی کی ضرورت ہے،قانون درست ہے طریقہ کار میں تبدیلی کرنا ہوگی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں