The news is by your side.

Advertisement

داعش اپنے ایک چوتھائی علاقے سے ہاتھ دھو چکی: رپورٹ

 لندن:عراق اورشام میں سرگرمِ عمل داعش نامی دہشت گرد تنظیم انتہائی تیزی کے ساتھ اپنا اثرو رسوغ کھو رہی ہے‘ تازہ رپورٹ کے مطابق داعش ایک چوتھائی علاقے سے ہاتھ دھو چکی ہے۔

آئی ایچ ایس کے سربراہ کولب اسٹرک کے مطابق شام اورعراق میں نبرد آزما داعش نے ستالیس ساٹھ ہزار چارسو مربع ریاست کا حصہ گنوادیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق جنگ کے باعث داعش کو مشکلات کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عراق اور شام میں جنگجووں نے اپنی دہشتگردانہ سرگرمیوں کو جاری رکھنے کی وجہ سے قبضہ کیا اور معتدد علاقوں کو ’نوگوایریا‘ بنایا۔

رپورٹ کے مطابق جون دو ہزار چودہ میں عالمی دہشتگرد تنیظم داعش کے خلیفہ ابو بکر بغدادی نے عراق کے شہر موصل پر تسلط جمایا تھا، اور وہاں اپنی خود ساختہ خلافت کو قائم کیا تھا۔

یہاں پڑھیں: عراقی شہر موصل میں آپریشن،داعش کے 800سےزائد دہشتگرد ہلاک

تاہم ملٹری آپریشن کے بعد داعش کا موصل پر سے تسلط ختم ہوا۔ بعد ازاں عالمی دہشتگرد تنظیم نے اپنا مرکزی دفتر شام کے شہر دمشق کو بنانا لیا تھا۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ شام کے شہر دمشق میں داعش بہت فعال تھی۔

یہاں پڑھیں: روسی حملوں کے سبب شامی افواج داعش کے خلاف کامیابیاں حاصل کررہی ہے: بشارالاسد

بعد ازاں روسی فورسز نے شام کے شہر دمشق میں سے داعش کا زور ختم کیا اور عالمی دہشتگردوں کو مار بھگایا، مگر اس کے باوجود ابھی بھی داعش کا وجود ان علاقوں میں موجود ہے۔ جس کا خاتمہ بہت ضروری ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں