The news is by your side.

Advertisement

امریکی اداکارہ لنڈسے لوہان سے ہیڈ اسکارف پہننے پرلندن ایئرپورٹ پر امتیازی سلوک

لندن : قرآن مجید کا مطالعہ کرنے والی امریکی اداکارہ لنڈسے لوہان کو ہیڈ اسکارف پہننے پرلندن میں ہیتھرو ایئرپورٹ پر امتیازی سلوک کرتے ہوئے روک لیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکی اداکارہ لنڈسے لوہان کو ہیتھرو ایئرپورٹ پر روک کر حجاب اتارنے کا مطالبہ کیا اور ساتھ ساتھ نسل پرستانہ رویہ اختیار کیا، جس پر اداکارہ نے حیرانی اور دکھ کا اظہار کیا۔

lind

ایک شو میں اداکارہ لنڈسے لوہان نے بتایا کہ کسٹم حکام نے انھیں لندن کے ہیتھرو ائیر پورٹ پر ہیڈاسکارف پہنے کی وجہ سے روکا، پاسپورٹ چیک کرنے کے بعد کسٹم آفیسر نے اسکارف اتارنے پر بھی اصرار کیا۔

گلو کارہ کا کہنا تھا کہ اس واقعے کے بعد انہیں اندازہ ہوا کہ سکارف پہننے والی خواتین کے ساتھ کیسا برا سلوک کیا جاتا ہے، دوسری خواتین کے بارے میں سوچ کر کافی ڈر گئیں ہوں۔


مزید پڑھیں : قرآن مجید تحفے میں ملا، اسلامی تعلیمات کھلے دروازے کی مانند ہیں، لنڈسے لوہان


یاد رہے کہ لنڈسے لوہان نے انسٹاگرام کے اکاؤنٹ پر سے اپنی پرانی تصاویرہٹادیں اور اسلام وعلیکم لکھا تھا، جس سے قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں کہ اداکارہ نے بطور مسلمان اپنی زندگی کا نیا آغاز کیا ہے اور تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔


مزید پڑھیں : ہالی ووڈ اداکارہ لنڈسے لوہن کا انسٹا گرام پر’اسلام وعلیکم‘ کا پیغام


خیال رہے کہ اداکارہ کا ٹوئٹر پر مداحوں سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ وہ اسلام کے بارے میں پڑھ رہی ہیں، تاہم انہوں نے اب تک اس مذہب میں تبدیل ہونے کے بارے میں نہیں سوچا۔

واضح رہے اداکارہ گزشتہ سال شامی پناہ گزینوں کی مدد کے لیے ترکی جا پہنچیں تھیں، جہاں اسکارف پہنی تصاویر نے سوشل میڈیا پر دھوم مچادی تھی، جس پر امریکی میڈیا نے انہیں شدید تنقید کا نشانہ بنایا تھا ۔

اس سے قبل لنڈسےلوہان کی گزشتہ سال اپریل میں تصاویرسامنے آئیں جس میں وہ قرآن مجید تھامے نیویارک کی گلیوں میں گشت کررہی تھیں۔

 ا

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں