The news is by your side.

Advertisement

لندن : اشاروں کی زبان میں خطاب کرنے والی پہلی خاتون وزیر

لندن : برطانیہ کی پہلی خاتون وزیر جنہوں نے پارلیمنٹ میں اشاروں کی زبان میں خطاب کرتے ہوئے قوت گویائی سے محروم افراد کی جانب سے اپنی صلاحیتوں کا مکمل استعمال نہ کرنے کے حوالے سے اراکین پارلیمنٹ کو آگاہ کیا۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ کی پارلیمنٹ میں خاتون وزیر برائے ریاستی ترقی پینی مورڈونٹ نے اراکینِ پارلیمنٹ کے روبرو 24 جولائی کو منعقد ہونے والی معذوری سربراہی کانفرنس کے حوالے سے اشاروں کی زبان میں خطاب کیا۔

خیال رہے کہ پینی مورڈونٹ برطانوی پارلیمنٹ میں اشاروں کی زبان میں خطاب کرنے والی پہلی خاتون ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ اراکین پارلیمنٹ کے سامنے خاتون وزیر گویائی سے محروم افراد کی جانب سے اپنی صلاحیتوں کا مکمل استعمال نہ کرنے کے حوالے سے تفصیلات بتارہی ہیں۔

پینی مورڈونٹ نے اپنے خطاب میں اسپیکر کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ برطانوی و کینیائی حکومت اور معذور افراد کی عالمی الائنس کی جانب سے لندن میں منعقد کی جانے والی کانفرنس کا مقصد طویل عرصے سے غریب ممالک میں زندگی گزارنے والے معذور افراد کی عالمی سطح پر تعاون کے حوالے سے ہے.

خاتون وزیر کا خطاب کے دوران کہنا تھا کہ غریب ممالک میں ہونے کے باعث انہیں کسی کا تعاون میسر نہیں آتا۔ لہذا یہ کانفرنس عالمی سطح پر ان افراد اور اداروں کی معاونت کرے گی، جو معذور افراد کے لیے کام کررہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ کچھ ممالک ایسے بھی ہیں جس میں معذوروں کو کمزور افراد میں شمار کیا جاتا ہے۔

مورڈونٹ کا مزید کہنا تھا کہ مجھے فخر ہے کہ ’میں نے ایسی چیز پر اپنی توجہ مرکوز کی جو طویل عرصے سے نظر انداز ہورہی تھی‘۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں