The news is by your side.

30 سیکنڈ تک یہ تصویر دیکھیں پھر بتائیں کیا محسوس ہوا؟

تصاویر کا مصوری ایک فن ہے بعض اوقات اس کو اس طرح تخلیق کیا جاتا ہے کہ دیکھنے والے کا سر چکرا جاتا ہے ایسا ہی کچھ اس تصویر کے ساتھ ہے۔

ہم ہمیشہ آپ کے لیے بصری دھوکے پر مبنی تصویری پہیلیاں بوجھنے کے لیے لاتے ہیں جو آپ کی دماغی صلاحیتوں کا امتحان اور ایک طرح سے ورزش ہوتی ہیں اور اس کو کافی پذیرائی بھی ملی ہے لیکن آج کی تصویر جو انٹرنیٹ پر کافی مقبول ہو رہی ہے۔ آپ نے اس میں چھپا کوئی ہندسہ، جانور یا معمہ نہیں ڈھونڈنا بس 30 سینکنڈ تک اسے دیکھنا ہے اور پھر بتانا ہے کہ آپ نے کیا محسوس کیا۔

اب تک جس نے بھی اس تصویر کو دیکھا ہے وہ الجھ کر رہ گیا ہے بلکہ یہ کہیں تو زیادہ بہتر ہے کہ تصویر کو دیکھتے ہوئے چکرا جاتا ہے کہ آخر تصویر میں ایسا کیا ہے جو دیگر تصویروں سے مختلف ہے۔

تصویر پر سرسری نظر ڈالیں تو یہ ایک سیاہ بیک سائیڈ پر سرمئی سلاخوں کے ساتھ مربع نما جالی کی تصویر لگتی ہے جس کے ہر خانے کے کونے پر ایک دائرہ موجود ہے اور یہی دائرہ تو دیکھنے والوں کو وہم میں مبتلا کرتا ہے اور بعض لوگوں کو تو چکرا کر رکھ دیتا ہے۔

اس تصویر کی خاص بات یہ ہے کہ ہر مربع کے کونے پر بنا دائرہ دیکھنے کے دوران کبھی سیاہ تو کبھی سفید رنگ بدلتا ہے جس کی وجہ سے تصویر پر صحیح توجہ مرکوز نہیں ہوپاتی اور دماغ الجھنے لگتا ہے۔

کیا آپ جانتے ہیں کہ یہ آپ کے دماغ کو کیسے چلاتا ہے؟ اس کی وجہ یہ ہے کہ یہ وہم کسی بھی قسم کا گرڈ ہے جو کسی شخص کی بصارت کو دھوکا دیتا ہے اور اس دھوکے کی دو عام قسمیں ہیں جو کہ ہرمن گرڈ وہم اور سکنٹیلیٹنگ گرڈ وہم کہلاتی ہے۔

inverse.com کے مطابق اس عمل کو معدومیت کے اثر کے نام سے جانا جاتا ہے۔ کیونکہ سیاہ نقطوں کے سفید دائرے کا طواف جہاں سرمئی گلیوں سے ملتا ہے، وہاں سیاہ اور سرمئی کے درمیان کم تضاد ہوتا ہے اور دماغ یہ سوچنے میں دھوکا کھا جاتا ہے کہ یہ نقطہ دراصل ہے کیا؟

ایسا اس لیے ہوتا ہے کیونکہ ٹشو کی شیٹ میں موجود ریٹنا خلیے جو کہ آنکھ کے عقبی حصے کے ریٹینا کہلاتے ہیں وہ اس کے برعکس دکھاتے ہیں جو کہ سامنے ہوتا ہے۔

ہمیں یقین ہے کہ آپ 30 سیکنڈ تک یہ تصویر دیکھ کر چکرا گئے ہوں گے تو کیا خیال ہے اب اسے اپنے دوستوں اور اہلخانہ سے شیئر کرکے ان کی آزمائش کریں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں