The news is by your side.

Advertisement

کورونا کٹ کی اصل قیمت کیا ہے اور وصول کیا کی جارہی ہے، اے آروائی نے پتہ لگالیا

کراچی : ملک میں مختلف کمپنیوں کی کورونا ٹیسٹنگ کٹس ہول سیل قیمت کے مقابلے مارکیٹ میں کئی گنا زیادہ فروخت کی جارہی ہے ، اے آر وائی نیوز نے کورونا کٹ کی اصل قیمت کا پتہ چلالیا۔

تفصیلات کے مطابق ملک میں کورونا کیسز میں اضافے کے ساتھ ہی کورونا ریپڈٹیسٹنگ کٹس کے نام پر شہریوں سے لوٹ مار جاری ہے تاہم کورونا کٹ کی اصل قیمت اور فروخت کی قیمت کے حوالے سے اے آروائی نے پتہ لگالیا۔

اے آر وائی نیوزکی تحقیقات میں پتہ چلا کہ کورونا ٹیسٹ جو ایک ہزار میں ہوسکتا ہے 3ہزار روپے تک وصول کئے جارہے ہیں جبکہ چائنہ ریپڈ ٹیسٹ کٹ کی ہول سیل قیمت350 روپے ہے ، جو 800 روپے میں فروخت ہورہی ہے۔

ذرائع نے بتایا جرمن ریپڈ ٹیسٹ کٹ کی ہول سیل قیمت 800 روپے ہے جبکہ مارکیٹ میں 1200 تک میں فروخت کی جارہی ہے۔

ایک بڑی کمپنی کی چوری شدہ کٹس بھی مارکیٹ میں ہول سیل ریٹ پر فروخت ہونے کا بھی انکشاف سامنے آیا ، ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت کودی گئی ایبٹ کی مفت کورونا کٹس مارکیٹ میں فروخت ہورہی ہیں، ان کٹس سے اسپتالوں اور لیبارٹریوں میں مفت ٹیسٹنگ ہونا تھی۔

ذرائع کے مطابق ایبٹ کی ریپڈ ٹیسٹ کٹ میڈیکل اسٹور پر 1ہزارروپے میں فروخت ہورہی ہے ، ایبٹ کورونا کٹ کی ہول سیل ریٹ پر مارکیٹ میں فروخت ہونے پر سوالیہ نشان لگا دیا ہے۔

اسپتالوں اور لیبارٹیرز جو ٹیسٹ لوگ خود کرسکتے ہیں، وہی ٹیسٹ مہنگے دام کئے جارہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں