The news is by your side.

Advertisement

لاس اینجلس ٹائمز کی بھارتی مسلمانوں پر چھائے خوف اور نقل مکانی کی تصدیق

دہلی میں فلیگ مارچ، لوگوں کو مظاہروں میں شرکت سے روکنے کے لیے لاؤڈ اسپیکر پر اعلانات

لاس اینجلس: امریکی اخبار لاس اینجلس ٹائمز نے بھارتی مسلمانوں پر چھائے خوف اور نقل مکانی کی تصدیق کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق شہریت کے متنازع قانون اور بھارتی حالات پر امریکی اخبار لاس اینجلس ٹائمز نے اپنی تازہ رپورٹ میں تصدیق کی ہے کہ بھارت میں مسلمان خوف میں مبتلا ہیں، بھارتی مسلمان اپنے محلے چھوڑ کر دوسری جگہ منتقل ہو رہے ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ علی گڑھ یونی ورسٹی میں ریاستی پولیس نے طلبہ پر تشدد کیا، فائرنگ کی گئی اور گرینیڈ پھینکے، پولیس نے مسلمان طلبہ پر مذہبی منافرت کے جملے بھی کسے، جامعہ ملیہ کی لائبریری میں گھس کر مسلم طلبہ پر تشدد کیا گیا۔

لاس اینجلس ٹائمز کا کہنا تھا کہ بھارت میں مسلمانوں پر منظم حملے کیے جا رہے ہیں۔

دہلی میں فلیگ مارچ

ادھر بھارت میں سیکورٹی دستوں نے گشت بڑھا دیا ہے اور دہلی میں فلیگ مارچ کیا گیا، بھارتی میڈیا کا کہنا ہےکہ لوگوں کو مظاہروں میں شرکت سے روکنے کے لیے لاؤڈ اسپیکر پر اعلانات کیے گئے۔ کرناٹک میں بی جے پی وزیر نے مظاہرین کی جائیداد ضبط کرنے کی دھمکی بھی دے دی ہے۔

مظاہروں کا سلسلہ جاری

بھارت کے مختلف شہروں میں شہریت کے متنازع قانون کے خلاف احتجاجی مظاہرے بدستور جاری ہیں، متنازع قانون کے خلاف آج نماز جمعہ کے بعد بھی احتجاج کیا جائے گا، بھارتی میڈیا کے مطابق اترپردیش میں سیکورٹی کے غیر معمولی اقدامات کیے گئے ہیں، یو پی کے مختلف علاقوں میں انٹرنیٹ سروس بھی بند ہے، پولیس اور پیرا ملٹری فورس کے اضافی دستے تعینات کر دیے گئے ہیں، ڈرون سے نگرانی کی جا رہی ہے۔

آج دہلی، ممبئی، آسام اور دیگر علاقوں میں متنازع قانون کے خلاف ریلیاں نکالی جائیں گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں