spot_img

تازہ ترین

کراچی میں موسلا دھار بارش کا کوئی امکان نہیں، چیف میٹرولوجسٹ

چیف میٹرولوجسٹ سردار سرفراز نے کہا ہے کہ کراچی...

ایاز صادق قومی اسمبلی کے اسپیکر منتخب

مسلم لیگ ن کے سردار ایاز صدیق قومی اسمبلی...

کمالیہ: بارش میں گھر کی چھت گر گئی، ماں باپ اور بیٹا جاں بحق

کمالیہ کے علاقے فاضل دیوان میں مسلسل اور تیز...

حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں اضافہ کردیا

نگراں حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں 4 روپے...

لفتھانزا ایئر کے زمینی عملے کی جانب سے ہڑتال کا اعلان

برلن: جرمن قومی ایئر لائن لفتھانزا کے زمینی عملے نے بدھ کے روز ملک گیر ہڑتال کا اعلان کر دیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق جرمنی کی قومی ایئرلائن لفتھانزا کا زمینی عملہ کل تنخواہوں میں اضافے کے مطالبے کے ساتھ ملک گیر ہڑتال کرے گا۔

ورکرز یونین کے مطابق ہڑتال بدھ کے روز صبح 4 بجے سے لے کر جمعرات کی صبح 7:10 تک ہوگی، ہڑتال کے سبب جرمنی کے مصروف ترین فرینکفرٹ ایئرپورٹ سمیت میونخ، ہیمبرگ، برلن اور ڈسلڈورف ایئرپورٹ سے سفر کرنے والے مسافروں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا۔

لفتھانزا کے ترجمان کے مطابق ایئرلائن روزانہ 3,000 پروازیں آپریٹ کرتا ہے، ہڑتال کے باعث بڑی تعداد میں پروازیں منسوخی کا شکار ہو سکتی ہیں۔ ورکرز یونین کا مطالبہ ہے کہ ان سے جڑے 25 ہزار کارکنوں کی اجرت میں 12.5 فی صد تک کا اضافہ کیا جائے، یا ماہانہ اجرت میں 500 یورو اضافہ اور 3000 یورو مہنگائی بونس دیا جائے۔

یاد رہے کہ جولائی 2022 میں بھی مطالبات کے لیے لفتھانزا کے گراؤنڈ اسٹاف اور انتظامیہ کے نمائندوں کے مابین مذاکرات ہوئے تھے، جو ناکام ہوئے اور اس کے نتیجے میں کارکنوں نے ہڑتال کر دی تھی، جس سے ہزاروں پروازوں کی آمد و رفت معطل یا متاثر ہو گئی تھی۔

یورپ کی سب سے بڑی معیشت جرمنی اس وقت مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے کارکنوں کی ملک گیر ہڑتالوں کی زد میں ہے۔ قومی ایئرلائن، جرمنی ریلوے اور دیگر پبلک ٹرانسپورٹ کے محکموں کے کارکن آئے دن ہڑتالیں کر رہے ہیں جن سے عوام شدید متاثر ہو رہے ہیں۔

Comments

- Advertisement -