تازہ ترین

کوئٹہ: تفتان جانیوالی بس سے اغوا کیے گئے 9 مسافر قتل

کوئٹہ:نوشکی کے قریب تفتان جانیوالی بس سے اغوا کیے...

بہاولنگر واقعے کی مشترکہ تحقیقات ہوں گی، آئی ایس پی آر

آئی ایس پی آر نے کہا ہے کہ بہاولنگر...

عیدالفطر پر وفاقی حکومت نے عوام کو خوشخبری سنا دی

اسلام آباد: عیدالفطر کے موقع پر وفاقی حکومت نے...

ایشیائی بینک نے پاکستان میں مہنگائی میں کمی کی پیشگوئی کر دی

ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان میں آئندہ مالی سال...

سنگدل شخص نے بیوی اور 7 بچوں کو قتل کر دیا

پنجاب کے علاقے مظفر گڑھ میں اجتماعی قتل کا...

طلاق کے بعد دوستیں مشورہ لینے لگ گئیں، ماہ نور حیدر

شوبز انڈسٹری کی معروف اداکارہ ماہ نور حیدر کا کہنا ہے کہ طلاق کے بعد میری دوستیں مشورہ لینے لگ گئیں۔

اداکارہ ماہ نور حیدر نے حالیہ انٹرویو میں اپنی شادی، طلاق اور اس کے بعد کی زندگی پر کھل کا اظہار خیال کیا اور بتایا کہ کم عمر میں ان کی شادی ہوئی اور پھر طلاق ہوگئی۔

ماہ نور حیدر نے کہا کہ اگر جاننے والوں میں کسی کی بھی شادی میں کوئی مسئلہ آتا ہے تو وہ مجھے فون کرتے ہیں اور توقع کرتے ہیں کہ میں انہیں علیحدہ ہونے کا مشورہ دوں گی لیکن میں ایسا نہیں کرتی اور منع کرتی ہوں کہ شوہر سے علیحدگی اختیار نہ کریں۔

انہوں نے کہا کہ ہر کسی کی زندگی مختلف ہوتی ہے مجھے طلاق کے وقت گھر سے سپورٹ حاصل تھی لیکن ہر کسی کے ساتھ ایسا نہیں ہوتا ہے۔

ماہ نور حیدر نے بتایا کہ ان کی شادی محض 22 سال کی عمر میں ہوگئی تھی، کالج کی پڑھائی ختم کرتے ہی انہوں نے شادی کرلی تھی۔

ان کے مطابق ان کا رشتہ 21 سال کی عمر میں طے ہوا اور 22 سال کی عمر میں ان کی رخصتی ہوئی، تاہم چار سال بعد ہی ان کی شادی طلاق پر 2020 میں ختم ہوئی۔

ماہ نور حیدر کا کہنا تھا کہ طلاق لینے سے قبل انہوں نے اپنی ازدواجی زندگی سے متعلق والد سے مشورہ کیا تھا، انہوں نے انہیں اپنی مرضی کےمطابق فیصلہ کرنا کا اختیار دیا اور کہا کہ وہ اپنی زندگی کے فیصلے سماج کو دیکھے بغیر اپنی مرضی سے کریں۔

انہوں نے والدین کی تعریفیں کرتے ہوئے اس بات پر شکرانے کیے کہ انہیں اچھے اور مدد دینے والے والدین ملے۔

ماہ نور حیدر نے یہ واضح نہیں کیا کہ ان کی طلاق کیوں ہوئی، تاہم بتایا کہ یہ لازمی نہیں ہے کہ شوہر یا بیوی غلط یا خراب ہو تو طلاق ہو، کبھی کبھار دونوں میاں اور بیوی اچھے بھی ہوتے ہیں لیکن وہ ایک ساتھ رہتے ہوئے اچھی طرح نہیں چل سکتے، اس لیے بھی الگ ہونا پڑتا ہے۔

اداکارہ کا کہنا تھا کہ ان کے ساس اور سسرالی ان کے لیے آج بھی اتنے ہی محترم ہیں جیسے شادی کے وقت تھے اور وہ ساس کی آج بھی والدہ کی طرح عزت کرتی ہیں۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ اگرچہ ان کی طلاق ہوچکی لیکن ان کے اور شوہر کے درمیان اب بھی اچھے روابط اور تعلقات ہیں بلکہ ان کے درمیان طلاق کے بعد پہلے سے زیادہ بہتر تعلقات ہیں۔

Comments

- Advertisement -