The news is by your side.

Advertisement

اب دنیا کو پاکستان کے لیے کچھ کرنا ہوگا: سابق برطانوی فوجی افسر

لندن: سابق برطانوی سینئر افسرجوناتھن ڈیوڈشا کا کہنا ہے کہ پاکستان میں ماضی کی نسبت آج سیکیورٹی صورت حال بہت بہتر ہے، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے حالات کی بہتری میں اہم کرداد ادا کیا۔

تفصیلات کے مطابق اپنے ایک بیان میں جوناتھن ڈیوڈشا کا کہنا تھا کہ اب مزید کے مطالبے کے بجائے دنیا کو پاکستان کے لیے کچھ کرنا ہوگا، پاکستان کے حالات بہت بہتر ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ پاکستان 1979 سے27 لاکھ افغان مہاجرین کا بوجھ اٹھائے ہوئے ہے، پاکستان نے 2014 کے اے پی ایس واقعے کے بعد بڑے فیصلے کیے، پاکستان نے افغان بارڈر کے 883کلومیٹر کے علاقے میں باڑ لگ چکی ہے۔

جوناتھن ڈیوڈ نے کہا کہ 1ارب ڈالر کے منصوبے سے بارڈر پر ہرنقل وحرکت کو چیک کیا جاتا ہے، پاکستانی اقدامات سے حقانی نیٹ ورک اور ٹی ٹی پی کی نقل وحرکت بند ہوئی۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی اقدامات کا کریڈٹ جنرل قمر جاوید باجوہ کو جاتا ہے، جنرل باجوہ کو جمہوریت پسندی پر سینئرز پر ترجیح دے کر سپہ سالار بنایا گیا، جنرل باجوہ نے سعودی عرب اور ایران کشیدگی کم کرانے کی کوشش کی۔

جوناتھن ڈیوڈشا نے کہا کہ افغانستان میں دیرپا امن کے لیے بھی جنرل باجوہ کا کردار سامنے ہے، جنرل باجوہ سمجھتے ہیں کہ مضبوط فوج کے لیے پائیدار معیشت اہم ہے۔

سابق برطانوی سینئر افسر کا مزید کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے ان کی سوچ اور کوششوں پر ہی 3سال کی توسیع دی، وزیراعظم عمران خان اور جنرل قمر باجوہ ایک اچھا امتزاج ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں