The news is by your side.

Advertisement

ملیحہ لودھی نے اقوام متحدہ کے انڈر سیکرٹری جنرل برائے پیس آپریشنز سے ملاقات

نیویارک: ملیحہ لودھی نے اقوام متحدہ کے قائم مقام انڈر سیکرٹری جنرل برائے پیس آپریشنز خالد خیری سے ملاقات کرکے انہیں مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم سے آگاہ کیا۔

تفصیلات کے مطابق اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ملیحہ لودھی نے قائم مقام انڈر سیکرٹری جنرل کو کشمیر کی تازہ صورتحال سے آگاہ کیا۔۔ملیحہ لودھی کا کہنا تھا کشمیر میں کرفیو اور انسانیت سوز پابندیاں چوتھے ہفتے میں داخل ہو گئی ۔

انہوں نے خالد خیری کو یہ باور کرایا کہ اس وقت عالمی برادری کی ذمہ داری ہے کہ وہ کشمیر میں انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزیوں کو رکوانے میں اپنا کردار ادا کرے ۔بھارتی فورسز راتوں میں چھاپے اور گرفتاریاں کر کے مقبوضہ وادی میں خوف و ہراس مزید بڑھا رہی ہے۔

ملیحہ لودھی نے قائم مقام انڈر سیکرٹری جنرل کو بتایا کہ کشمیر میں بھارتی بربریت سے حالات مزید سنگین ہونے کا خدشہ ہے ۔ اقوام متحدہ کو کشمیر میں صورتحال کو ابتر ہونے سے روکنا ہوگا۔

انہوں نے اس امر پر زور دیا کہ لائن آف کنٹرول کی نگرانی کرنے والے اقوام متحدہ امن مشن کی تعداد بڑھا کر اسے مزید فعال بنایا جائے۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز اقوام متحدہ میں پاکستانی مندوب ڈاکٹرملیحہ لودھی نے اقوام متحدہ جنرل اسمبلی کی صدر ماریہ فرنینڈا سے ملاقات کی تھی اور انہیں مقبوضہ کشمیر کی صورت حال سے آگاہ کیا تھا۔

اس اہم ملاقات میں ڈاکٹر ملیحہ لودھی نے کہا تھا کہ بھارت نے کشمیریوں کی تمام آزادی سلب کررکھی ہے، بھارت کے غاصبانہ تسلط نے کشمیریوں کو اندھیرے میں دھکیل دیا۔

اس سے دو روز قبل اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ماہرین نے بھارت سے مقبوضہ کشمیر میں مواصلات کی بندش ختم کرنے اور پرامن مظاہروں کے خلاف کارروائیاں روکنے کا مطالبہ کیاتھا۔ اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق کے دفتر کی جانب سے جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا کہ حکومت کا انٹرنیٹ اور مواصلات کے نظام کو بغیر کسی وجہ کے بند کرنا بنیادی جمہوری اصولوں کے خلاف ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں