The news is by your side.

Advertisement

قرنطینہ: 8 سیکنڈز کی ’آزادی‘ نے ڈھائی لاکھ کا جرمانہ کروا دیا

کاؤشیانگ: تائیوان میں ایک شخص کو قرنطینہ سے محض 8 سیکنڈز کے لیے باہر نکلنا بے حد بھاری پڑ گیا، خلاف ورزی کرنے والے کو ڈھائی لاکھ روپے جرمانہ ہو گیا۔

تفصیلات کے مطابق تائیوان کے کاؤشیانگ شہر میں ایک شخص کو قرنطینہ ضابطے کی خلاف ورزی پر ڈھائی لاکھ روپے کا جرمانہ کر دیا گیا، وہ محض آٹھ سیکنڈز کے لیے ہوٹل کے کمرے سے باہر نکلا تھا۔

غیر ملکی میڈیا کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ مذکورہ شخص فلپائن کا تارک وطن ہے، اور ہوٹل کے کمرے میں کوارنٹین کیا گیا تھا، لیکن وہ باہر نکل آیا۔

واضح رہے کہ ہر ملک میں قرنطینہ قوانین یکساں نہیں ہیں، بعض ممالک میں یہ نہ صرف بہت سخت ہیں بلکہ ان کا نفاذ بھی سختی سے کیا جاتا ہے۔ پاکستان اور بھارت میں لاک ڈاؤن کے دوران بے ضرورت باہر نکلنے والوں کو پولیس اہل کاروں نے سڑکوں پر مرغا بھی بنایا اور ڈنڈوں سے پٹائی بھی کی، سوشل میڈیا پر جس کی ویڈیوز وائرل ہوئیں۔

تائیوان ان ممالک میں شامل ہے جہاں قرنطینہ قوانین پر سختی سے عمل درآمد کیا جاتا ہے، اس آئی لینڈ ملک میں ایک شخص کو آٹھ سیکنڈ کی خلاف ورزی کے لیے ڈھائی لاکھ روپے کا جرمانہ کیا گیا۔

محکمہ صحت کا کہنا تھا کہ فلپائن سے آیا ہوا مزدور ہوٹل کے کمرے سے ہال وے میں باہر نکل آیا تھا، ہوٹل اسٹاف نے اسے سی سی ٹی وی پر دیکھا تو محکمہ صحت کو فوراً اطلاع دے دی۔

خیال رہے قرنطینہ قوانین کا مطلب ہے کہ لوگوں کو اپنے گھروں سے باہر نکلنے کی اجازت نہیں ہے خواہ وہ کم وقت کے لیے ہو۔ تائیوان کو اپنے اقدامات کے لیے دنیا بھر میں سراہا گیا۔ رواں برس تائیوان میں کرونا وائرس سے محض 7 اموات ہوئیں اور 720 کیسز سامنے آئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں