The news is by your side.

فائرنگ سے جاں بحق معظم کو شہید قرار دیا جائے: لواحقین کا مطالبہ

لاہور: گزشتہ روز حقیقی آزادی مارچ میں فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے تحریک انصاف کے کارکن معظم گوندل کے لواحقین نے اسے شہید قرار دینے کا مطالبہ کیا ہے، گزشتہ روز کے واقعے میں سابق وزیر اعظم عمران خان فائرنگ سے زخمی ہوئے تھے۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے تحریک انصاف کے کارکن معظم گوندل کے لواحقین نے اسے شہید قرار دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

مرحوم کے کزن عثمان گوندل کا کہنا ہے کہ وزیر اعلیٰ پرویز الٰہی معظم کو شہید قرار دینے کا اعلان کریں، شہید معظم کے کمسن بچے ہیں، حکومت ان کی مالی سرپرستی کرے۔

کزن کے مطابق معظم نے دہشت گرد کو پکڑتے ہوئے اپنی جان قربان کی، یہی کام کرتے ہوئے کوئی پولیس اہلکار مارا جاتا تو اسے شہید کا درجہ ملتا، معظم دوسرے لوگوں کی طرح جان بچا کر وہاں سے بھاگا نہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں معظم کی بہادری اور شہادت پر فخر ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز صوبہ پنجاب کے شہر وزیر آباد میں سابق وزیر اعظم عمران خان کے حقیقی آزادی مارچ میں کنٹینر کے قریب فائرنگ ہوئی تھی۔

قاتلانہ حملے میں عمران خان سمیت 6 افراد زخمی ہوئے جبکہ معظم گوندل نامی کارکن جاں بحق ہوگیا تھا۔

گولی سابق وزیر اعظم کی ٹانگ میں لگی تھی جس کے بعد انہیں اسپتال منتقل کیا گیا، عمران خان کی حالت اس وقت خطرے سے باہر ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں