The news is by your side.

Advertisement

پارک سے بچہ اغوا کرنے والا رنگے ہاتھوں گرفتار، ویڈیو دیکھیں

برلن: جرمنی کے دارالحکومت برلن میں ایک پارک سے بچہ چراتے ہوئے ایک شخص رنگے ہاتھوں پکڑا گیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق برلن میں ایک شخص 2 سالہ بچی کو پلے پارک سے اٹھا کر لے جا رہا تھا کہ کیمرے میں رنگے ہاتھوں پکڑا گیا، بچی کی ماں نے اس کی مشکوک حرکتوں کی وجہ سے اس کا تعاقب کیا لیکن اسے نہ پکڑ سکی۔

چوالیس سالہ لمبے قد کے آدمی نے بچی اس وقت اٹھائی جب اس کی ماں دوسروں کے ساتھ باتوں میں مصروف تھی، مشتبہ شخص نے بچی کو اٹھا کر کندھوں پر بٹھایا اور پارک سے آسانی سے نکل جاتا اگر اس کی ماں نے اس کی مشکوک حرکات نوٹ نہ کی ہوتیں۔

ستائیس سالہ ماں نے مشتبہ شخص کا تعاقب کیا لیکن اس کی تیز رفتاری کا ساتھ نہ دے سکی، جس پر اس نے ایک کھوکھے والے سے مدد مانگی، جس پر چوالیس سالہ کھوکھا مالک زوران زی نے مشتبہ شخص کا تعاقب کر کے اسے پکڑ لیا۔

زوران زی نے مشتبہ شخص سے پوچھا کہ کیا وہ اس کی بیٹی ہے، اس نے جواب دیا کہ یہ میری بچی نہیں تاہم مجھے بچے بہت پسند ہیں۔

بعد ازاں، مشتبہ شخص کو پولیس کے حوالے کیا گیا تاہم پولیس نے بعد میں اسے یہ کہہ کر رہا کر دیا کہ گرفتاری کے وارنٹ کے لیے شرائط ناکافی ہیں، پولیس نے مشتبہ شخص کو چھوڑنے کے بعد بچی کے والدین کو مطمئن کرنے کے لیے ٹویٹر پر ایک پوسٹ کے ذریعے کہا کہ کیس میں نہ تو جنسی محرکات یا بدنیتی کے ارادے کے کوئی ثبوت نہیں ملے۔

پولیس کا یہ بھی کہنا تھا کہ برلن میں اب کسی پلے گراؤنڈ میں جانا معمول سے زیادہ خطرناک نہیں رہا ہے، تاہم دوسری طرف بچی کے والدین ایک ایسے شخص کی رہائی پر تحفظات کا اظہار کیا جسے ایک بچی اٹھاتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں