The news is by your side.

Advertisement

عجیب و غریب ساخت کا ’سر رکھنے والا‘ شخص

کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے لوگ مختلف انداز میں اپنے منہ کو ڈھانپ رہے ہیں تاہم انگلینڈ کا ایک شہری اپنے منفرد کور کی وجہ سے لوگوں کا توجہ کا مرکز بنا ہوا ہے۔

انگلینڈ کے شہر برسٹل کا رہائشی مائیکل شیڈ ورتھ اب سے نہیں بلکہ طویل عرصے سے یہ منی ایچر گارڈن اسٹرکچر اپنے سر پر پہن رہا ہے۔

برسٹل کے گلی کوچوں میں وہ اسی شیڈ کے ساتھ گھومتے پھرتے ہیں اور اس کی وجہ سے لوگوں اور مقامی میڈیا کی توجہ کا مرکز بنے رہتے ہیں۔

مائیکل کو اس شیڈ کی وجہ سے ایک ملازمت کے لیے بھی مسترد کیا جاچکا ہے۔

اس شیڈ کی وجہ سے ان کی شناخت اب تک چھپی ہوئی تھی تاہم کچھ عرصہ قبل انہوں نے ایک مقامی چینل کو پہلی بار انٹرویو دیا۔

اپنے انٹرویو میں انہوں نے دعویٰ کیا کہ یہ شیڈ دراصل ان کا سر ہے، ان کے والدین بھی ایسے ہی تھے۔

مائیکل کا کہنا تھا کہ میں بتانا چاہتا ہوں کہ میں اسے لوگوں کی توجہ حاصل کرنے کے لیے نہیں پہنتا بلکہ یہ میرے جسم اور میری زندگی کا حصہ ہے، یہ مجھے خدا کی طرف سے ملا ہے۔

اس شیڈ سے اکثر موسیقی کی آوازیں بھی آتی ہیں جن کے بارے میں ان کا کہنا ہے کہ یہ موسیقی ان کے اندر سے آتی ہیں۔

مائیکل کا کہنا ہے کہ شاید لوگوں کو اچھا لگتا ہو کہ لوگ ان کے بارے میں باتیں کریں لیکن مجھے یہ بات سخت ناپسند ہے، میں ایک عام زندگی جینا چاہتا ہوں اور لوگوں اور میڈیا کی توجہ سے سخت بیزار ہوں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں