The news is by your side.

Advertisement

بی جے پی رہنما مانیکا گاندھی کی مسلمان ووٹرز کو دھمکی

نئی دہلی: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی رہنما مانیکا گاندھی نے ووٹ کے لیے مسلمان ووٹرز کو دھمکانا شروع کردیا۔

تفصیلات کے مطابق بی جی رہنما مانیکا گاندھی نے مسلمان ووٹرز کو دھمکی دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر وہ ان کی مدد کے بغیر جیت گئیں اور بعد میں مسلمان کسی کام کے لیے ان کے پاس آئے تو پھر یہ شکایت نہ کی جائے کہ انہوں نے ان کا ساتھ نہیں دیا۔

مانیکا گاندھی کا کہنا تھا کہ مسلمانوں کی مدد بغیر جب وہ جیت جائیں گی تو ان کا دل کھٹا ہوگا اور وہ مسلمانوں کا کوئی کام کرتے ہوئے سوچیں گی۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ وہ لوگوں کی مدد اور پیار سے جیت رہی ہیں تاہم اگر ان کی جیت مسلمان ووٹرز کے بغیر ہوئی تو انہیں اچھا نہیں لگے گا۔

مزید پڑھیں: لوک سبھا انتخابات: مودی کو بڑا دھچکا، دو وزرا نے پارٹی سے علیحدگی اختیار کرلی

خطاب کے دوران مانیکا گاندھی نے کہا کہ اندازہ ہے کہ میں لوک سبھا کے انتخابات جیت چکی ہوں۔

مانیکا گاندھی نے جلسے کے دوران پنڈال میں موجود تمام ووٹرز کو کہا کہ وہ ان کا پیغام ہر جگہ پھیلادیں کہ وہ مسلمان ووٹرز کے بغیر جیتنا نہیں چاہتیں، اگر ایسا ہوگیا تو مسلمان مشکل میں آجائیں گے۔

واضح رہے کہ مانیکا گاندھی کا تعلق بی جے پی کی سب سے بڑی مخالف جماعت کانگریس کے سربراہ خاندان سے ہے، وہ سابق بھارتی وزیراعظم اندرا گاندھی کی بہو ہیں۔

خیال رہے کہ مانیکا گاندھی کے حلقے پر چھٹے مرحلے 12 مئی کو انتخابات ہوں گے تاہم وہ اپنی جیت کا دعویٰ پہلے ہی کرچکی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں