The news is by your side.

Advertisement

کرکٹ قوانین پر تنقید کیوں کی؟ سوشل میڈیا صارفین انگلش بولر پر برس پڑے

لندن: میری لیبون (ایم سی سی) نے گذشتہ روز کرکٹ قوانین میں اہم تبدیلیاں کیں ، جسے کرکٹ کے نامور ستاروں نے سراہا مگر انگلش فاسٹ بولر نے اسے سراسر زیادتی قرار دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری بیان میں اسٹیورٹ براڈ نے ‘مینکڈنگ’ کو غیر منصفانہ فعل قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس طرز عمل میں کسی قسم کی مہارت شامل نہیں ہے، آوٹ کرنے کے دیگر طریقے جیسے کلین بولڈ، ایل بی ڈبلیو، کیچ وغیرہ مہارت کے کام ہیں، مگر مینکڈنگ ایسا نہیں ہے۔

انگلش فاسٹ بولر نے مزید کہا کہ منکڈ اب غیر منصفانہ نہیں رہا اور اب ایک جائز برخاستگی ہے؟ کیا یہ ہمیشہ سے جائز برطرفی نہیں رہا اور کیا یہ غیر منصفانہ ہے؟

اسٹیورٹ براڈ نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ میں کرکٹ کے اس غیر منصفانہ فعل پر غور نہیں کرونگا۔

اسٹیورٹ براڈ کے ٹوئٹس پر سوشل میڈیا صارفین نے انہیں آڑے ہاتھوں لیا، ایک مداح نے براڈ سے پوچھا کہ کیا وہ کبھی کسی بلے باز کو رن آؤٹ نہیں کریں گے؟ جس پر انہوں نے کہا کہ وہ رن آؤٹ کو مہارت کا کام سمجھتے ہیں، یہ فضول فیصلہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں: گیند کو چمکانے کے لئے تھوک کا استعمال’ ٹیمپرنگ’ قرار

جب ایک مداح نے براڈ سے پوچھا کہ کیا وہ کبھی کسی بلے باز کو رن آؤٹ نہیں کریں گے، تو تیز گیند باز نے جواب دیا کہ وہ رن آؤٹ کو مہارت کا کام سمجھتے ہیں۔

آئرلینڈ کرکٹ بورڈ نے بھی اسٹیورٹ براڈ کے ٹوئٹس پر سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ انگلش کرکٹر انصاف، عقل اور مہارت پر ایک روشن لیکچر دے رہے ہیں، اگر انگلش کرکٹرز میں کوئی خوبی ہوتی تو آج وہ ایک اعلیٰ مقام پر ہوتے ناکہ کھیل کے قوانین پر بات کرتے۔

واضح رہے کہ ایم سی سی نے منکڈنگ کو باضابطہ رن آؤٹ کی فہرست میں شامل کیا تھا جس میں بولر کریز سے باہر نان اسٹرائیکر بلےباز کو آؤٹ کرسکے گا، جبکہ نان اسٹرائیکر کے گیند ہونے سے قبل رن آؤٹ پر گیند کو اوور میں شامل نہیں کیا جائے گا۔

 

Comments

یہ بھی پڑھیں