The news is by your side.

Advertisement

روسی بینک کی نائب صدر بڑا فراڈ کر کے فرار

ماسکو: روسی بینک کی نائب صدر مرینا راکووا کو فراڈ کے الزام میں انتہائی مطلوب قرار دے دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق روس کے قانون نافذ کرنے والے اداروں نے Sberbank کی نائب صدر مرینا راکووا کو غبن کر کے مفرور ہونے کے الزام میں انتہائی مطلوب افراد کی فہرست میں شامل کر دیا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ شبہ ہے کہ مرینا راکووا قانونی چارہ جوئی کے خوف سے بیرون ملک چلی گئی ہیں، اس لیے مرینا کو بین الاقوامی مطلوب فہرست میں بھی ڈالا جا سکتا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق سبربینک میں اپنے کام سے پہلے مرینا راکووا روس میں نائب وزیر تعلیم کے عہدے پر براجمان تھیں، انھوں نے مبینہ طور پر ٹیکس دہندگان کے پیسے غبن کیے۔

حکام کا کہنا ہے کہ جو رقم غبن کی گئی وہ ابتدائی طور پر وفاقی تعلیمی پروگرام کے لیے ریاستی معاہدوں کے لیے مختص تھی، تاہم مرینا نے اسے ‘فنڈ فار نیو فارمز آف ایجوکیشن ڈویلپمنٹ’ کو بھیجا، جہاں وہ سی ای او تھیں۔

راکووا پر 50 ملین روبل (685،000 ڈالر) سے زائد کے غبن کا الزام ہے، اور اس کے لیے انھیں 10 سال تک قید کی سزا ہو سکتی ہے۔

بدھ کو قانون نافذ کرنے والے اداروں نے ان کے دفتر اور گھر کی تلاشی لی تھی، جب کہ ایک دن بعد وہ پوچھ گچھ کے لیے حاضر نہیں ہوئیں، اور اپنا موبائل فون بھی بند کر دیا تھا۔

جمعرات کو ماسکو کی ایک عدالت نے راکووا کے تین سابقہ ساتھیوں کو جرم میں شامل ہونے کی بنا پر جیل بھیج دیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں