The news is by your side.

Advertisement

بھارت نے کشمیر کی حیثیت ختم کرکے گوریلا جنگ کی بنیاد رکھ دی، سابق بھارتی جج

نئی دہلی : بھارتی سپریم کورٹ کے سابق جج مرکنڈے کیٹجو نے کہا ہے کہ بھارت نے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرکے بڑی گوریلا جنگ کی بنیاد رکھ دی ہے، کشمیر انڈیا کیلئے ویتنام بن جائے گا۔

یہ بات انہوں نے ایک عالمی میگزین میں شائع ہونے والے ایک مضمون میں لکھی۔ سابق بھارتی جج کا کہنا تھا کہ کشمیر بھارت کیلئے ویتنام بننے جارہا ہے، جس طرح امریکیوں اور فرانسیسیوں کے ساتھ ویتنام میں ہوا تھا جو امریکیوں کے ساتھ افغانستان میں ہوا ہے یا نپولین کے ساتھ سپین میں ہوا تھا وہی انڈیا کے ساتھ کشمیر میں ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ بھارت نے مقبوضہ جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے بعد وادی میں بڑی گوریلا جنگ کی بنیاد رکھ دی ہے۔

سچ بولنے کا ایک مقرر وقت ہوتا ہے اور میں سمجھتا ہوں کہ وہ وقت آگیا ہے کہ اب سچ بولا جائے۔ انہوں نے کہا کہ آج جو لوگ آرٹیکل370 کے خاتمے پر اپنی فتح کے شادیانے بجا رہے ہیں۔

ان کیلئے بہت جلد یہ ایک بھیانک سپنا بننے جارہا ہے، یہ اس ڈراﺅنے سپنے کی وجہ سے تب جاگیں گے جب کشمیر سے لاشوں کے بیگ آنا شروع ہوں گے جس طرح ویتنام میں امریکیوں کے ساتھ ہوا تھا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ آج کے دور میں موبائل اور انٹرنیٹ ضرورت ہیں عیاشی نہیں، کسی بھی آدمی کو اس سہولت سے ایک دن کیلئے محروم کرنا بھی تشویشناک ہوسکتا ہے۔

اسی لیے ان لوگوں کے جذبات کو سمجھا جاسکتا ہے جن کے پاس گزشتہ دو مہینے سے یہ سہولت نہیں ہے، اس کے ساتھ کرفیو اور پابندیاں الگ ہیں۔پابندیاں اٹھائیں اور دیکھیں کہ پوری وادی میں کس قسم کا احتجاج ہوتا ہے۔

ابھی ایک لاوا پک رہا ہے اور بہت جلد یہ پھٹنے والا ہے، اب صورتحال یہ ہوچکی ہے کہ نا نگلتے بنے ، نا اگلتے بنے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں