مردان: طالبعلم کے قتل میں ملوث 8 ملزمان ریمانڈ پر پولیس کے حوالے -
The news is by your side.

Advertisement

مردان: طالبعلم کے قتل میں ملوث 8 ملزمان ریمانڈ پر پولیس کے حوالے

پشاور: مردان کی عبدالولی خان یونیورسٹی کے طالب علم مشعال خان کے قتل کے کیس میں نامزد مزید 2 ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا۔ پہلے سے گرفتار شدہ 8 ملزمان 4 روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیے گئے۔

تفصیلات کے مطابق مردان کی عبد الولی خان یونیورسٹی میں قتل ہونے والے مشعال خان کے کیس میں پیش رفت سامنے آئی ہے اور پولیس نے مزید 2 نامزد ملزمان کو گرفتار کر لیا ہے۔

اس سے قبل 8 ملزمان پولیس کی تحویل میں ہیں۔ نامزد ملزمان میں یونیورسٹی کے7 اہلکار بھی شامل ہیں۔

گرفتار شدہ 8 نامزد ملزمان کو مردان کی انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں پیش کیا گیا۔ عدالت نے ملزمان کو 4 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔

مزید پڑھیں: مذہب کا نام بدنام کرنے کے لیے ہم خود ہی کافی ہیں، ملالہ

دوسری جانب وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ پرویز خٹک نے مردان میں طالب علم مشعال کے قتل کی جوڈیشل انکوائری کی سمری پر دستخط کردیے۔

پرویز خٹک کا کہنا ہے کہ مشعال خان کسی واقعہ میں ملوث نہیں تھا، کیس کو لوگوں کے لیے مثال بنائیں گے۔ کسی کو قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دیں گے۔

یاد رہے کہ 2 روز قبل صوبہ خیبر پختونخواہ کے شہر مردان کی عبدالولی یونیورسٹی میں ایک مشتعل ہجوم نے طالب علم مشعال خان کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنا کر اسے موت کے گھاٹ اتار دیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں