The news is by your side.

Advertisement

سعودی آئل ٹینکر پر حملے کی ذمہ داری امریکا نے ایران پر عائد کردی

واشنگٹن: یمن میں سعودی آئل ٹینکر پر حملے کی ذمہ داری امریکا نے ایران پر عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ جو میزائل حملہ آئل ٖٹینکر پر ہوا وہ ایران سے حاصل کیا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق گذشتہ دنوں یمن کے الحدیدہ بندر گاہ پر سعودی آئل ٹینکر پر حوثی باغیوں نے میزائل حملہ گیا تھا جبکہ امریکا نے ایران کو بھی اس حملے میں ملوث قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ جو میزائل آئل ٹینکر پر داغا کیا گیا وہ ایران سے حاصل کیا گیا تھا۔

واشنگٹن میں پریس کو بریفنگ دیتے ہوئے امریکی وزیر دفاع جیمز میٹس کا کہنا تھا کہ یمن کے بندر گاہ پر حوثی باغیوں نے جو میزائل داغا تھا وہ ایران نے انہیں سپلائی کیا تھا تاہم اس حملے میں ٹینکر کو جزوی طور پر نقصان پہنچا تھا۔


ترک بحری جہاز پر حملہ، عرب فوجی اتحاد نے ذمہ داری حوثی باغیوں پر عائد کردی


علاوہ ازیں سعودی عرب کے اتحادی افواج کے ترجمان ترکی المالکی نے بھی اس واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ حوثی باغیوں نے سعودی آئل ٹینکر پر میزائل فائر کیے تھے تاہم اس حملے میں بڑے پیمانے پر نقصان نہیں ہوا تھا۔

خیال رہے کہ گذشتہ ماہ یمن کے الحدیدہ بندہ گاہ پر موجود ترکی کے بحری جہاز پر بھی حملہ کیا گیا تھا جس کی ذمہ داری عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے یمن میں برسرپیکار حوثی باغیوں پر عائد کی تھی۔

ترکی المالکی نے یہ بھی کہا تھا کہ یمن کے سقطری جزیرے میں شاہ سلمان ریلیف مرکز قائم کیا گیا ہے، اس کے علاوہ صعدہ گورنری کی مزید کئی علاقوں اور قصبوں کو باغیوں سے چھڑانے کے بعد ان پر یمنی پرچم لہرا دیا گیا ہے، جبکہ سرحدی علاقوں پر حالات قابو میں ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں