The news is by your side.

Advertisement

مزید بارش ہوئی تو سنبھالنا ناممکن ہو جائے گا، میئر کراچی کی مدد کے لیے وفاق سے اپیل

کراچی: میئر کراچی وسیم اختر نے وفاق سے مدد مانگ لی، کہا ہے شہر قائد میں مزید بارش ہوئی تو ہمارے لیے سنبھالنا نا ممکن ہو جائے گا، وفاقی حکومت ہماری مدد کو آگے آئے۔

تفصیلات کے مطابق میئر کراچی وسیم اختر نے بحری امور کے وزیر علی زیدی کو خط لکھ کر اپنی پریشانیوں کا اظہار کیا اور وفاق سے بارشوں کے بعد پیدا ہونے والی صورت حال سے نمٹنے کے لیے مدد طلب کی۔

وسیم اختر نے وفاقی وزیر کو خط میں لکھا کہ جو ادارے شہری حکومت کے پاس ہونے چاہیے تھے وہ سندھ حکومت کے پاس ہیں۔

میئر کراچی کا کہنا تھا کہ ایک طرف ادارے شہری حکومت کے پاس نہیں ہیں، دوسری طرف سندھ حکومت بری طرح نا کام ہو گئی ہے، سندھ حکومت خود کام کر رہی ہے اور نہ ہمیں کرنے دے رہی ہے۔

انھوں نے خط میں اپیل کی کہ وفاقی حکومت آگے آئے اور کراچی کی شہری حکومت کی مدد کرے، بارش مزید ہوئی تو ہمارے لہے سنبھالنا نا ممکن ہو جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:  اختیارات کی جنگ نے کراچی کو ڈبو دیا، بجلی 12 سے 15 گھنٹے سے غائب

میئر کراچی وسیم اختر نے لکھا کہ وزیر اعظم عمران خان اور وفاقی وزیر پورٹس اینڈ شپنگ ہماری مدد کو آگے آئیں۔

انھوں نے کہا کہ کراچی ایمرجنسی کی صورت حال میں ہے، مشنری دی جائے تاکہ لوگوں کو ریسکیو کیا جا سکے۔

خیال رہے کہ کراچی میں اختیارات کے تنازع کے باعث عوام کے لیے مسائل میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے، میئر کراچی کا کہنا ہے کہ ان کے پاس اداروں کا اختیار نہیں، جب کہ سندھ حکومت کے کانوں پر جوں بھی نہیں رینگتی۔

دوسری طرف سندھ لوکل باڈی ایکٹ کے تحت اختیارات کی اس جنگ نے کراچی کو بارش کے پانی میں ڈبو دیا ہے، صوبائی وزرا اور بلدیاتی نمایندے نمایشی دوروں پر نکلتے ہیں، کچھ کرتے نہیں، حکومتی مشینری غائب ہے، پانی کھینچنے والے پائپ بھی ناکارہ ہو گئے، شہر کی اہم شاہ راہوں سے واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کا عملہ بھی غائب ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں