The news is by your side.

Advertisement

افغان طالبان کا دورہ پاکستان، اہم آڈیو پیغام سامنے آگیا

پشاور: افغان طالبان کے رکن وفدمولانا شہاب الدین نے دورہ پاکستان کے حوالے سے کہا دورے میں 5 اہم نکات زیربحث لائے جائیں گے اور معمولی جرائم میں قید افغان مہاجرین کی رہائی کے اقدامات پر زور دیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق افغان طالبان کے دورہ پاکستان سے متعلق اہم آڈیو پیغام سامنے آگیا، رکن وفد مولانا شہاب الدین نے کہا دورے میں 5 اہم نکات زیربحث لائے جائیں گے، اہم افغان سیاسی رہنمااور شہریوں کی پاکستان میں آمدورفت میں مشکلات پربات ہوگی۔

مولانا شہاب الدین کا کہنا تھا کہ پاکستان میں افغان مہاجرین کوصحت و تعلیم کےمسائل پرتبادلہ خیال ہوگا جبکہ معمولی جرائم میں قید افغان مہاجرین کی رہائی کے اقدامات پر زور دیا جائے گا۔

خیال رہے ملابرادر کی زیرقیادت وفد اہم امور پر بات چیت کے لیے پاکستان میں موجود ہیں۔

یاد رہے طالبان کے سیاسی دفتر کا اعلیٰ سطحی وفد ملا عبدالغنی برادر کی سربراہی میں وزارت خارجہ پہنچا جہاں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے وفد کو وزارت خارجہ میں خوش آمدید کہا۔

طالبان وفد کی وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی سے ملاقات ہوئی، ملاقات کے دوران خطے کی صورتحال، افغان امن عمل سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ ء خیال کیا گیا۔

مزید پڑھیں : افغان امن عمل کی بحالی ، پاکستان اور افغان طالبان کے وفود کے درمیان مذاکرات

پاکستان اور افغان طالبان کےدرمیان دفترخارجہ میں مذاکرات ہوئے ، مذاکرات کے دوران فریقین نے مذاکرات کی جلد بحالی کی ضرورت پراتفاق کیا۔

وزیر خارجہ نے کہا پاکستان خوش دلی کے ساتھ گذشتہ چار دہائیوں سے لاکھوں افغان مہاجرین بھائیوں کی میزبانی کرتا چلا آ رہا ہے ، پاکستان نے افغان امن عمل میں مشترکہ ذمہ داری کے تحت نہایت ایمانداری سے مصالحانہ کردار ادا کیا ہے ، پرامن افغانستان پورے خطے کے امن و استحکام کیلئے ناگزیر ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے واضح کیا کہ پاکستان افغان امن عمل کو کامیاب بنانے کیلئے اپنا مصالحانہ کردار صدق دل سے ادا کرتا رہے گا ، جس پر افغان طالبان کے اعلیٰ سطحی وفد نے افغان امن عمل میں پاکستان کے مصالحانہ کردار کی تعریف کی۔

خیال رہے کہ طالبان کے سیاسی دفتر کا اعلیٰ سطحی وفد ملا عبدالغنی برادر کی سربراہی میں رات دیر گئے قطر کے دارالحکومت دوحہ سے اسلام آباد پہنچا تھا ، افغان طالبان کا وفد چین، روس اور ایران کے بعد پاکستان کا دورہ کررہا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں