spot_img

تازہ ترین

صدر نے تحفظات کے باوجود قومی اسمبلی اجلاس بلانے کی سمری پر دستخط کردیے

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے تحفظات...

سنی اتحاد کونسل کو مخصوص نشستیں دی جائیں یا نہیں؟ فیصلہ محفوظ

اسلام آباد :الیکشن کمیشن نے سنی اتحاد کونسل کی...

سنی اتحاد کونسل کو مخصوص نشستیں نہیں چاہئیں، چیف الیکشن کمشنر

سنی اتحاد کونسل کی مخصوص نشستوں کے لیے درخواست...

خیبر پختونخواہ اسمبلی میں نو منتخب اراکین نے حلف اٹھالیا

اور: خیبر پختونخواہ اسمبلی میں نو منتخب اراکین نے...

روس یا یوکرین : پولینڈ پر میزائل کس نے مارا؟ اہم انکشاف

روس اور یوکرین جنگ کے دوران ہونے والے حملوں میں ایک میزائل پولینڈ کی حدود میں گرنے سے دو افراد ہلاک ہوئے جس کا الزام روس پر عائد کیا جارہا ہے جس کی تردید کردی گئی ہے۔

اس حوالے سے ایسوسی ایٹڈ پریس کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ابتدائی تحقیقات میں معلوم ہوا ہے کہ پولینڈ پر میزائل یوکرین کی جانب سے داغا گیا تھا۔

پولینڈ حکومت کا کہنا ہے کہ اس بات کی تصدیق ہوگئی ہے کہ تباہی ایک روسی ساختہ میزائل سے ہوئی لیکن ابھی تک اس بات کا کوئی ٹھوس ثبوت نہیں ملا ہے کہ یہ کس کی جانب سے داغا گیا۔ دوسری جانب روسی دفاعی حکام نے پولینڈ پر میزائل حملے کی تمام خبروں کی سختی سے تردید کردی ہے۔

خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق ہلاکتوں اور نقصان کا سبب یوکرینی افواج کی جانب سے داغا گیا ایک میزائل ہوسکتا ہے جس کا ہدف روس کی جانب سے یوکرین کی طرف آنے والا ایک میزائل تھا۔ ادارے نے امریکی حکام کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ خبر ابتدائی تحقیقات پر مبنی ہے۔

اس سلسلے میں نیٹو حکام کا کہنا ہے کہ پولینڈ کے میزائل حملے کا ذمہ دار بالآخر روس ہے جبکہ امریکی حکام کے مطابق پولینڈ کو نشانہ بنانے والا میزائل یوکرین کی افواج نے آنے والے روسی میزائل پر داغا تھا۔

نیٹو اتحاد کے ایک بیان کے مطابق میزائل سے متعلق ایک ہنگامی اجلاس نیٹو ہیڈ کوارٹرز برسلز میں طلب کیا گیا ہے جس کی صدارت نیٹو کے سیکرٹری جنرل جینز سٹولٹنبرگ نیٹو کریں گے،

اجلاس میں اتحادی رکن پولینڈ کی سرزمین پر مشتبہ میزائل حملے کے معاملے پر تبادلہ خیال کیا جائے گا، جس میں دو افراد ہلاک ہوئے تھے۔

Comments

- Advertisement -