The news is by your side.

Advertisement

ماڈل کورٹس کی تیز ترین سماعت: ایک دن میں 353 مقدمات نمٹا دیئے، دو مجرمان کو پھانسی

اسلام آباد : ملک بھر میں373ماڈل کورٹس نے آج مجموعی طور پر353مقدمات کا فیصلہ سنا دیا، دو مجرمان کو پھانسی جبکہ02 کو عمرقید کی سزا سنائی گئی، عدالتوں نے220گواہان کے بیانات قلمبند کیے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کی ماڈل کورٹس میں مقدمات کی تیز ترین سماعت کا سلسلہ جاری ہے، ہفتہ کو ملک بھر میں قائم 373ماڈل کورٹس نے مجموعی طور پر 353 مقدمات کے فیصلے سنائے۔

ایک سو تین مقدمات میں قتل کے48 اور منشیات کے55 مقدمات شامل ہیں، تمام عدالتوں نے کل 220 گواہان کے بیانات قلمبند کیے۔پنجاب میں قائم ماڈل کورٹس نے قتل کے 33 اور منشیات کے 32 کا فیصلہ کیا جبکہ سندھ میں قتل کے 10 اور منشیات کے 11 کا فیصلہ سنایا گیا۔

خیبر پختونخوا میں قتل کے 3 اور منشیات کے 8 اور بلوچستان میں قتل کے 2 اور منشیات کے 4 مقدمات کا فیصلہ ہوا۔ ماڈل کورٹس نے 2 مجرمان کو سزائے موت جبکہ 10کو عمر قید کی سزا سنائی گئی16 مجرمان کو کل61 سال 1 ماہ اور 7563712 روپے جرمانہ کی سزا سنائی۔

چھیانوے سول ایپلٹ ماڈل کورٹس نے آج مجموعی طور پر 108 دیوانی، فیملی اور رینٹ اپیلوں و درخوست نگرانی کے فیصلے کیے۔ 110 مجسٹریٹس عدالتوں نے 142مقدمات کے فیصلے سنائے۔

تمام سول عدالتوں نے 270 گواہان کے بیانات قلمبند کیے۔سول کورٹس نے مجموعی طور پر 30 مجرمان کو 25 سال،6 ماہ اور 5 دن قید کی سزا سنائی جبکہ مجموعی طور پر 2485283 روپے جرمانہ کی سزا سنائی گئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں