The news is by your side.

Advertisement

کراچی میں چائنیز بسوں کے بعد یورپی معیار کی الیکٹرک بسیں بھی چلیں گی

کراچی :   وزیر ٹرانسپورٹ سندھ   شرجیل میمن نے ترکش کمپنی کو  یورپی معیار کی الیکٹرک بسیں لانے کی پیش کش کردی۔

تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ شرجیل انعام میمن کی ترکش کمپنی البیارک کے ڈائریکٹر جمیل شن اوجاک سے ملاقات ہوئی ، ملاقات میں سیکرٹری ٹرانسپورٹ عبدالحلیم شیخ ، ایم ڈی سندھ ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کیپٹن (ر) الطاف حسین بھی موجود تھے ۔

صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ نے ترکش کمپنی کو کراچی میں یورپی معیار کی الیکٹرک بسیں لانے کی پیش کش کی۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے شرجیل انعام میمن نے کہا کہ کراچی میٹرو پولیٹن شہر ہے جہاں بزنس کے بہترین مواقع موجود ہے، محکمہ ٹرانسپورٹ سندھ نے شہر میں ہزاروں بسیں لانے کی منصوبہ بندی کی ہے۔

صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ کراچی میں ریڈ لائن ، اورینج لائن ، پیپلز بس سروس اور یلو لائن کے تحت جدید بی آر ٹی سسٹم کی منصوبہ بندی کی ہے ۔

شرجیل میمن نے ترکش کمپنی کے ڈائریکٹر کو دھابیجی فری اکنامک زون میں مینوفیکچرنگ پلانٹ لگانے کی بھی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ سندھ حکومت ترکش کمپنی کے ساتھ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ سمیت پبلک ٹرانسپورٹ میں سرمایہ کاری پر سبسڈی دینے کے لیے بھی تیار ہے ۔

صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ پاکستان اور ترکی کے بہترین تعلقات ہیں ، ہم چاہتے ہیں، ترکش کمپنیاں سندھ میں پبلک ٹرانسپورٹ کے شعبے میں سرمایہ کاری کریں ۔

انھوں نے کہا کہ صوبائي وزير نے کہا کہ گذشتہ دنوں ترکی کے دورے کے دوران ان کی ترکی کے نائب وزیر ٹرانسپورٹ سے ملاقات ہوئی انہیں بھی سندھ میں پبلک ٹرانسپورٹ میں سرمایہ کاری کی دعوت دی ہے ۔

البیارک گروپ ڈائریکٹر جمیل شن اوجاک کا کہنا تھا کہ پاکستان میں کام کرنے پر ہمیں فخر محسوس ہوتا ہے، ہم چاہیں گے پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں پبلک ٹرانسپورٹ کے شعبے میں کام کریں ، اس سلسلے میں جلد از جلد پروپوزل بنائیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں