The news is by your side.

Advertisement

بندر ڈاکٹروں کے نقش قدم پر چل پڑے

افریقی جنگلوں میں رہنے والے بندر ماہر ریسکیو اہلکاروں اور ڈاکٹروں کے نقش قدم پر چلتے ہوئے ساتھی بندروں کو سی پی آر دینے لگے۔

اکثر اوقات ایسے مناظر دیکھنے میں آتے ہیں کہ کسی حادثے میں زخمی ہونے والے یا پانی میں ڈوبنے والے شخص کی سانس بحال کرنے کےلیے ماہر ریسکیو اہلکار یا ڈاکٹر سی پی آر دیتا ہے۔

کسی ماہر ریسکیو اہلکار یا ڈاکٹر کی طرح براعظم افریقہ کے ملک بوستوانا کے جنگلات میں رہنے والے بندر نے سی پی آر کے ذریعے ساتھی بندر کی سانس بحال کی۔

جنگلی حیات کی تصاویر بنانے والے فوٹوگرافر نے بوستوانا کے جنگلات میں پیش آنے والے واقعے کو اپنے کیمرے میں قید کرلیا جو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہورہا ہے۔

فوٹوگرافر کا کہنا ہے کہ میں جنگلی جانوروں کی تصاویر بنارہا تھا کہ اچانک ایک بندر کھیلتے کھیلتے زمین ہر گر پڑا اور بے ہوش ہوگیا اتنے میں ایک اور بندر وہاں آیا اور ساتھی بندر کو سی پی آر دینے لگا جس کے باعث اس کی سانس بحال ہوگئی اور وہ دوبارہ اٹھا بیٹھا۔

واضح رہے کہ سی پی آر منہ کے ذریعے کسی دوسرے مریض کو سانس دینے کے عمل کو کہتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں