site
stats
سندھ

ساڑھے 5 لاکھ اسلحہ لائسنس تاحال غیر تصدیق شدہ ہیں، مراد علی شاہ

کراچی: وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ سندھ حکومت کی جانب سے جاری کردہ اسلحہ لائسنس میں سے 5 لاکھ سے زائد لائسنس کی تصدیق نہیں ہوسکی۔

تفصیلات کےمطابق وزیر اعلیٰ سندھ نے محکمہ داخلہ سے اسلحہ لائسنس کے حوالے سے رپورٹ طلب کی اور غیر تصدیق شدہ  اسلحہ لائسنس سے متعلق سمری طلب کی، اس موقع پر سیکریٹری داخلہ نے وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کو آگاہ کیا کہ ’’سندھ حکومت کی جانب سے 10 لاکھ 7 ہزار اسلحہ لائسنس جاری کیے گیے ہیں جن میں سے 4 لاکھ 8 ہزار کی تصدیق ہوچکی ہے‘‘۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے ہوم سیکریٹری سندھ کو ہدایت جاری کیں کہ ’’غیر تصدیق شدہ ساڑھے 5 لاکھ لائسنس  منسوخ کردیے جائیں اور تصدیق ہونے والے والے لائسنس کی تفصیلات ویب سائٹ پر ڈالی جائیں‘‘۔

انہوں نے اسلحہ لائسنس حاصل کرنے والے افراد سے اپیل کی کہ وہ اپنے اسلحہ لائسنس کی تصدیق کروالیں بصورت دیگر منسوخ کردیا جائے گا، وزیر اعلیٰ سندھ نے محکمہ داخلہ کو ویب سائٹ فعال کرنے کی بھی ہدایات جاری کیں۔

پڑھیں :   ڈاکو کو مارنے پر آئی جی سندھ کا شہری کو پچاس ہزار روپے انعام

دوسری جانب آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے گزشتہ روز ڈاکوؤں کو ہلاک کرنے والے شخص سے ملاقات کرتے ہوئے 50 ہزار روپے بطور انعام دیے اس موقع پر انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’’لائسنس رکھنے والے افراد اسلحہ سجا کر نہ رکھیں بلکہ اسے اپنے ساتھ لے کر چلیں اور جہاں دہشت گردوں کو دیکھیں انہیں زخمی کردیں اسی طرح اسٹریٹ کرائم پر قابو پایا جاسکتا ہے‘‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ ’’صدر پارکنگ پلازہ کے قریب جب ملٹری کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا تو عوام وہاں سے بھاگنے لگے اگر کسی شخص کے پاس لائسنس یافتہ اسلحہ موجود ہوتا تو ممکن ہے کہ دہشت گردوں کو نشانہ بناکر گرفتار یا ہلاک کیا جاسکتا تھا‘‘۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top