The news is by your side.

Advertisement

ماں بیٹی کا کارنامہ، دنیا داد دئیے بغیر نہ رہ سکی

واشنگٹن: امریکہ سے تعلق رکھنے والی ماں بیٹی نے تاریخ رقم کردی ہے۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق امریکہ سے تعلق رکھنے والی کیپٹن سوزی گیریٹ اور ان کی بیٹی نے ایک ساتھ کمرشل پرواز اڑانےکا کارنامہ سر انجام دیا ہے، اس کے ساتھ ہی دونوں کمرشل پرواز اڑانے والی دنیا کی جوڑی بن گئیں۔

سوزی گیریٹ کا اپنی بیٹی کے ساتھ سفر شروع کرنے سے پہلے کہنا تھا کہ مجھے اپنی نوکری سے بہت پیار ہے، ہمارے کسی بچے نے مستقبل میں پائلٹ بننے کے لئے نہیں سوچا تھا، مگر جب آپ کسی دوسرے کے کیر یئر کو دیکھتے ہیں جو دفتر میں بیٹھے ہوں ، اور بہت خوش بھی ہوں، یہ آپ کی آنکھیں کھونے کے لئے کافی ہے۔

والدہ کے ساتھ یادگار سفر پر جانے والی ڈونا کا کہنا تھا کہ مجھے بہت چھوٹی عمر ہی سے ہوا بازی کی حقیقت کا علم ہوچکا تھا، والدین کے شوق اور پرواز سے محبت کی وجہ سے پائلٹ بننے کا فیصلہ کیا، میری والدہ اور والد کے طرز زندگی کا تجربہ حیرت انگیز تھا، یہی وجہ ہے کہ آج میں دنیا کے سامنے آگئی ہوں۔Seeing the world: Donna got to do a lot traveling growing up because of her parents' jobs

کیپٹن سوزی گیریٹ تیس سال سے زیادہ عرصے سے پائلٹ ہیں، حال ہی انہوں نے اپنی بیٹی اور فرسٹ آفیسر ڈونا گیریٹ کے ساتھ کاک پٹ کی تصاویر شیئر کیں، دونوں اس وقت امریکہ میں اسکائی ویسٹ ایئر لائنز کی ملازم ہیں۔

کیپٹن سوزی گیریٹ کا مزید کہنا تھا کہ آج سے تیس سال پہلے میں نے اپنی پہلی پرواز لی تھی، اسکائی ویسٹ کے ساتھ اتنے عرصے جڑے رہنے کی سب سے بڑی وجہ شیڈولنگ ہے، مجھے یہ پسند ہے، میں اپنی ایئر لائن سے محبت کرتی ہوں، اب مجھے فخر محسوس ہورہا ہے کہ میری بیٹی بھی اسکائی ویسٹ فیملی کا حصہ ہے، مجھے لگتا ہے کہ اس کا کیریئر بھی شاندار ہوگا۔Looking back: 'Experiencing my mom and dad's lifestyle was wonderful,' she said. 'It revealed to me the possibilities the industry offered'

واضح رہے کہ کیپٹن سوزی گیریٹ اور ان کی بیٹی کے علاوہ سوزی کے شوہر ڈوگ اور اس کا بیٹا مارک بھی پائلٹ ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں