spot_img

تازہ ترین

شہباز شریف پاکستان کے 24 ویں وزیراعظم منتخب

اسلام آباد: قومی اسمبلی نے مسلم لیگ ن کے...

وزارت عظمیٰ کا تاج کس کے سر سجے گا؟ فیصلہ آج ہوگا

اسلام آباد: نومنتخب قومی اسمبلی آج کے خصوصی اجلاس...

وزیراعظم کی تقریب حلف برداری پیر کو منعقد کرنے کا فیصلہ

وزیراعظم کی تقریب حلف برداری کی تقریب پیر کو...

سپریم کورٹ نے موٹر سائیکل سواروں کیلئے حکم جاری کردیا

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے موٹر وے پر موٹر سائیکل چلانے کی اجازت دینے سے متعلق کیس کا فیصلہ جاری کردیا۔ عدالت نے اسلام آباد ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں موٹروے پر موٹر سائیکل چلانے کی اجازت دینے کیخلاف کیس کی سماعت ہوئی، جس کے بعد سپریم کورٹ نے کیس کا تحریری فیصلہ جاری کردیا ہے۔

نو صفحات پر مشتمل فیصلہ جسٹس محمد علی مظہر نے تحریر کیا، جس کے مطابق موٹر وے پر موٹر سائیکل چلانے کیخلاف وفاقی حکومت کی درخواست منظور کرلی گئی۔

تحریری فیصلے میں سپریم کورٹ نے اسلام آباد ہائی کورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے لکھا کہ موٹر ویز پر موٹر سائیکل چلانے کی اجازت دینا خطرناک ہوسکتا ہے۔

سپریم کورٹ کا کہنا ہے کہ ملکی قوانین شہریوں کی جان ومال کی حفاظت کیلئے بنائے جاتے ہیں، حکومت کے پاس احتیاطی تدابیر کے تحت مخصوص علاقوں میں موٹرسائیکل پر پابندی کا اختیار ہے۔

فیصلے میں مزید کہا گیا ہے کہ موٹروے پرتیز رفتار ٹریفک موٹر سائیکل سواروں کیلئے خطرناک ہوگی، شہریوں کی حفاظت کیلئے موٹر سائیکل پر پابندی بنیادی حقوق کی خلاف ورزی نہیں۔

 

موٹر وے پر بائیکس چلانے کے خلاف وفاقی حکومت کی درخواست منظور کر لی گئی موٹر  ویز پر بائیکس چلانے کی اجازت دینا خطرناک ہوسکتا ہے،موٹر وے پر تیز رفتار  ٹریفک موٹرسائیکل

واضح رہے کہ اسلام آباد لاہور موٹروے (ایم ٹو) کی تعمیر کے بعد نیشنل ہائی وے سیفٹی آرڈیننس 2000 کے تحت موٹروے پولیس کو قومی شاہراہوں پر ٹریفک کو ریگولیٹ اور کنٹرول کرنے کے اختیارات دیئے گئے تھے۔ ایم ٹو موٹروے پر موٹر سائیکل چلانے پر روزِ اول سے پابندی عائد ہے۔

مذکورہ پالیسی ہائی ویز اور موٹروے کوڈ رول 202 میں شامل ہے، روڈ ٹریفک کے ویانا کنوینشن کے مطابق سڑک کے اصولوں سے متعلق حکومتی دستاویز1968 میں تیار کی گئی تھی۔

اس پابندی سے صرف موٹروے پولیس کو پٹرولنگ کے لیے 500 سی سی کی موٹر سائیکل استعمال کرنے کا استثنیٰ حاصل تھا لیکن اسے بھی حفاظت کی وجہ سے جاری نہیں رکھا گیا اور بائیکس کو کاروں سے پیٹرول کاروں میں تبدیل کردیا گیا۔

Comments

- Advertisement -