ایم کیوایم اور حکومت کے درمیان معاملات طے پاگئے، استعفے واپس لینے کا اعلان -
The news is by your side.

Advertisement

ایم کیوایم اور حکومت کے درمیان معاملات طے پاگئے، استعفے واپس لینے کا اعلان

اسلام آباد: متحدہ قومی موومنٹ اورحکومت کے درمیان بالاخرمعاملات طے پاگئے اورایم کیو ایم نے اراکینِ پارلیمنٹ کے استعفے واپس لینے کا اعلان کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت اورایم کیو ایم کے وفد کے درمیان پنجاب ہاؤس میں میٹنگ ہوئی جس میں حکومت کی جانب سے وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈاراوروزیراطلاعات پرویز رشید بھی موجود تھے۔

مذکرات کے بعد ایم کیوایم کےرہنما فاروق ستار اوروفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے پریس کانفرنس کی جس میں حکومت کی جانب سے ایم کیا ایم کی شکایات کے ازالے کے لئے کمیٹی کی تشکیل کا اعلان کیا جس کے جواب میں فاروق ستارنے منگل کواستعفے واپس لینے کا اعلان کیا۔

اس سلسلے میں ایم کیو ایم اور حکومت کے درمیان مفاہمتی یادداشت پر دستخط بھی کئے گئے ہیں۔

اسحاق ڈار نے کمیٹی کی تشکیل کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کمیٹی 90 روز کے اندرشکایات کے ازالے کے لئے پابند ہوگی۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ کراچی آپریشن پر ایم کیو ایم کا تعاون شروع سے ہی حاصل ہے اور آپریشن کے سبب شہر میں امن قائم ہوا ہے۔

اس موقع پر فاروق ستارنے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کراچی آپریشن ہماری ایما پر شروع کیا گیا تھااوریہ آپریشن کراچی میں دیرپا امن قائم کررہاہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہماری خواہش ہے کہ کراچی سے دہشت گردی کا مستقل خاتمہ ہو اوراس کے لئے ہمارا تعاون جاری رہے گا۔

اجلاس کےدوران فاروق ستار کی قیادت میں ایم کیو ایم وفد نے اپنے تحفظات سے متعلق حکومتی ٹیم کو آگاہ کیا جب کہ حکومتی وفد نے یقین دلایا کہ کراچی میں جاری ٹارگٹڈ آپریشن پرفیکٹ فائنڈنگ کمیٹی تشکیل دی جائے گی جو کہ ایم کیو ایم کی شکایات کا جائزہ لے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں