ایم کیو ایم کا این اے 258 ضمنی الیکشن سے بائیکاٹ -
The news is by your side.

Advertisement

ایم کیو ایم کا این اے 258 ضمنی الیکشن سے بائیکاٹ

کراچی : ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ مکنہ دھاندلیوں اور سندھ حکومت کی جانبداری کی وجہ سے این 258 ملیر کے ضمنی الیکشن کے بائیکاٹ کا اعلان کرتے ہیں۔

ایم کیو ایم پاکستان کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق رابطہ کمیٹی نے متفقہ طور پر قومی اسمبلی کے حلقہ 258 کے لیے 24 نومبر کو ہونے والے ضمنی الیکشن کے بائیکاٹ کا فیصلہ کیا ہے اس نشست پر ایم کیو ایم کے امیدوار ممتاز علی عمرانی تھے۔

ایم کیو ایم پاکستان نے بائیکاٹ کا اعلان کرتے ہوئے موقف اپنایا کہ سندھ حکومت تمام سرکاری مشینری استعمال کرتے ہوئے الیکشن کے نتائج پر اثر انداز ہو رہی ہے جس سے واضح نظر آرہا ہے کہ الیکشن میں سرکاری سطح پر دھاندلی کا منصوبہ بنالیا گیا ہے ۔

واضح رہے قومی اسمبلی کے حلقہ 258 سے جنرل الیکشن 2008 میں عبد الحکیم بلوچ پاکستان پیپلز پارٹی کے ٹکٹ پر کامیاب ہوئے تھے جب کہ جنرل الیکشن 2013 میں پی پی کی جانب سے ٹکٹ نہ ملنے پر وہ مسلم لیگ کے امیدوار کے طور پر کامیاب ہوئے تھے تا ہم مسلم لیگ سے اختلاف کے باعث وہ اپنی نشست سے مستعفی ہو گئے اور اب ضمنی الیکشن میں دوبارہ پیپلز پارٹی کے ٹکٹ پر الیکشن لڑ رہے ہیں جن کی جیت کے امکانات کافی قوی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں