دو سال میں دہشت گردی میں کتنی کمی آئی ہے‘ فاروق ستار کاسوال -
The news is by your side.

Advertisement

دو سال میں دہشت گردی میں کتنی کمی آئی ہے‘ فاروق ستار کاسوال

اسلام آباد: ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستارکا کہنا ہے کہ حکومت نے سول عدالتوں کی بہتری کے لئے کوئی بھی اقدامات نہیں کیے،انہوں نے کہا کہ ہم فوجی عدالتوں کے قیام کے مخالف نہیں ہیں.

تفصیلات کے مطابق متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے سول عدالتیوں کو بہتربنانے کے لئےکسی قسم کے کوئی اقدامات نہیں کیے ہیں۔

مزید پڑھیں:حکومت اوراپوزیشن فوجی عدالتوں کے قیام پرمتفق

ان کا کہنا تھا کہ ہم فوجی عدالتوں سے متعلق تحفظات سے وزیراعظم کو آگاہ کریں گے، پہلے بھی ہم نے وزیراعظم کی یقین دہانی کے بعد عدالتوں کی حمایت کی تھی۔ فاروق ستار کا کہنا تھا کہ فوجی عدالتوں کے قیام کی راہ ہموارکرنے میں ہمارا کلیدی کردارتھا،ہم فوجی عدالتوں کے قیام کے مخالف نہیں ہیں.

مزید پڑھیں:پاکستان میں 11 سالوں میں 17،255 دہشت گردی کے واقعات ہوئے: رپورٹ

،متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ نے حکومت سے سوال کیا کہ آخر کب تک دہشت گردی کے خلاف جنگ چلے گی؟

مزید پڑھیں:دس سال تک دہشت گردی کے واقعات ہوں گے، ڈی جی انٹیلی جنس بیورو

فاروق ستار نے حکومت سے پوچھا کہ ہمیں بتایا جائے کہ دو سال میں دہشت گردی میں کتنی کمی آئی ہے؟ حکومت کو اتنی آسانی سے راہ فرار اختیار نہیں کرنے دیں گے.

ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ ہمارا سنجہدہ مطالبہ ہے کہ قوم کو اب  ریلیف ملنا چاہئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں