The news is by your side.

Advertisement

امریکا کے صدارتی انتخابات ٹرمپ اور روس کے درمیان کوئی رابطہ ثابت نہیں ہوا

واشنگٹن : امریکی انتخابات کے دوران روسی مداخلت سے متعلق امریکی محکمہ صحت انصاف نے ملر رپورٹ کانگریس میں پیش کر دی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی اٹارنی جنرل ولیم بار کا کہنا ہے کہ 2016ء کے انتخابات میں ٹرمپ اور روس کے درمیان کوئی رابطہ ثابت نہیں ہوا البتہ روس کی انٹیلی جنس نے ہیکرز کے ذریعے امریکی انتخابات میں مداخلت کی کوشش کی تھی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ روسی ہیکرز نے کچھ ای میلز حاصل کرکے وکی لیکس جیسی ویب سائٹ کو بھی دیں تھیں۔

دوسری جانب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے رد عمل دیتے ہوئے ٹویٹ کیا کہ نہ ہی رابطہ ثابت ہوا اور نہ ہی مداخلت کے ثبوت ملے، نفرت کرنے والوں اور ڈیموکریٹس کا ” گیم اوور“ ہو چکا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی قانونی ٹیم کا کہنا ہے کہ مذکورہ رپورٹ کے ذریعے سارا بوجھ صدر ٹرمپ پر ڈالنے کی کوشش کی گئی ہے۔

قانونی مشاوروں کا کہنا تھا کہ رپورٹ میں کہیں بھی یہ تحریر نہیں تھا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے روسی سازش کا حصّہ تھے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے بارہا تحقیقات میں رکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کی ہے حتیٰ کہ انہوں نے رابرٹ ملر کو بھی ہٹانے کی کوشش کی تھی۔

اتحقیقاتی رپورٹ اسپیشل کونسل رابرٹ ملر نے تحریر کی تھی، ادھر کانگریس اسپیکر نینسی پیلوسی نے چار سو صفحات پر مشتمل رپورٹ عوام کے سامنے پیش کرنے کا مطالبہ کردیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں