The news is by your side.

Advertisement

ملکی معیشت پر سوال کرنے والے مفتاح اسماعیل صحافی کے سوال پر سٹپٹا گئے

لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن کی پریس کانفرنس کے دوران ملکی معیشت پر سوال کرنے والے سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل صحافی کے سوال پر بری طرح سٹپٹا گئے۔

جب ن لیگی رہنما مفتاح اسماعیل پی ٹی آئی کے موجودہ دور کی معیشت کی بدحالی پر بات کر رہے تھے، تو اچانک صحافی نے سوال کیا کہ اگر ملکی معیشت تباہ ہوگئی ہے تو آپ کی کمپنی نےاس سال دگنا منافع کیسے کما لیا؟

صحافی کے اس سوال نے ن لیگی رہنما کے اوسان خطا کر دیے، صحافی نے کہا لیگی دور میں آپ کی کمپنی سالانہ تقریباً 35 کروڑ منافع دکھا رہی تھی، لیکن پی ٹی آئی دور میں آپ کی کمپنی کا منافع دگنا ہوگیا، تو آپ معیشت کو تباہ کیسے کہہ رہے ہیں؟

مفتاح اسماعیل کو کوئی جواب نہ سوجھا تو عجیب منطق پیش کر دی، کہا میری کمپنی کے منافع کا ملکی معیشت سے کیا تعلق ہے، اس دوران لقمہ دینے کے لیے مشہور ساتھ بیٹھی مریم اورنگ زیب نے لقمہ دیا ’یہ کیساسوال ہے۔‘

خیال رہے کہ مفتاح اسماعیل کی کمپنی نے رواں سال 9 ماہ میں دگنے سے بھی زیادہ منافع کمایا ہے۔

دوسری طرف وزیر مملکت برائے اطلاعات و نشریات فرخ حبیب نے نیوز کانفرنس میں کہا کہ مفتاح اسماعیل کو کیا پتا کہ معیشت کس انداز میں آگے بڑھ رہی ہے، اپوزیشن کی باڈی لینگویج ہی ان کی گفتگو کا ساتھ نہیں دے رہی، مفتاح اسماعیل کی کمپنی بھی پاکستان میں ہی ہے کیسے منافع کما رہی ہے۔

انھوں نے کہا کرونا وبا کے باوجود ہم نے انڈسٹری کو بند نہیں ہونے دیا، معیشت بہتر ہو رہی ہے اسی لیے مفتاح اسماعیل کی کمپنی بھی منافع کما رہی ہے، ملک میں حالات سازگار ہیں جس پر اپوزیشن بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔

وفاقی وزیر صنعت و پیداوار حماد اظہر نے نیوز کانفرنس میں کہا کہ پی ڈی ایم کو بتانا چاہتا ہوں اگلے سال معیشت کی ترقی کی شرح 5 فی صد ہوگی، وہ عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنا بند کر دیں، 2023 میں اقتصادی شرح نمو 6 فی صد پر جانے کا امکان ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں