The news is by your side.

Advertisement

رینجرز اختیارات میں توسیع نہیں کی گئی تو تاجروں کے ہمراہ احتجاج کریں گے، مفتی نعیم

کراچی : جامعہ بنوریہ کے مہتمم اعلیٰ مفتی نعیم نے کہا ہے کہ اگر سندھ حکومت نے رینجرز اختیارات میں توسیع نہیں کی گئی تو تاجر برادری کے ساتھ مل کر بھر پور احتجاج کیا جائے گا۔

مفتی نعیم نے کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ کراچی میں  امن و امان فوج، رینجرز اور پولیس کی کوششوں سے بحال ہوا ہے جس کے لیے رینجرز کے سپاہیوں نے شہادتیں بھی دیں اور کئی زخمی بھی ہوئے جس کے بعد کراچی کی روشنیاں بحال ہوئیں


*بغیر اختیارات کے رینجرز کو چوراہوں پر کھڑا نہیں کر سکتے، چوہدری نثار


انہوں نے کہا کہ مجھے رات بھر تاجروں کے فون آتے رہے ہیں جن کا کہنا تھا کہ رینجرز کے آپریشن کے باعث ہم آزادانہ اور بے خوف کاروبار کرنے کے قابل ہوئے ہیں اور اگر سندھ حکومت نے رینجرز کو اختیارات نہیں دیئے تو ہم اپنا کاروبار بند کر دیں گے یاپھر کہیں اور منتقل ہوجائیں گے۔


*مزید انتظار نہیں کیا جائے گا، رینجرز کو اختیارات آج ہی دیئے جائیں، مصطفی کمال


معروف مذہبی شخصیت مفتی نعیم کا کہنا تھا کہ تاجروں کی گواہی ایک طرف میں بھی کراچی کا شہری ہونے کی حیثیت سے دیکھتا ہوں کہ رینجرز کی کارروائیوں کے باعث شہر میں امن قائم ہوا ہے اس لیے مطالبہ کرتے ہیں کہ حکومت سندھ فی الفور رینجرز اختیارات میں توسیع کرے ورنہ تاجر براداری کے ساتھ مل کر بھرپوراحتجاج کریں گے۔


رینجرز اختیارات، فیصلہ کابینہ اجلاس میں کیا جائے گا*


دوسری جانب سندھ حکومت 15 اپریل سے رینجرز کو حاصل خصوصی اختیارات کی معیاد ختم ہونے کے بعد  دوبارہ  تو سیع کرنے میں جلد بازی سے کام نہیں لینا چاہتی اور آج وزیر اعلیٰ سندھ نے ایک اہم میٹنگ کے بعد یہ معاملہ سندھ کابینہ کے اجلاس میں لے جانے کا فیصلہ کیا ہے۔

دریں اثناء صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے مفتی نعیم نے مطالبہ کیا کہ مشال قتل جیسے واقعات کو روکنےکے لیےقانون سازی کی جائے اور بے بنیاد الزام لگانے والوں کے خلاف سخت سے سخت قانون وضع کیے جائیں کیوں کہ توہین رسالت کا الزام ثابت کیے بغیر کسی کو قتل کرنا جائزنہیں بلکہ بذات خود یہ اقدام اہانت مذہب سے زیادہ بڑا جرم ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں