The news is by your side.

Advertisement

بربریت کی انتہا ، بھارتی فوج کا مقبوضہ وادی میں عزاداران پر بدترین تشدد، نوجوان کو گاڑی تلے روند ڈالا

سری نگر : بھارتی فوج نےمقبوضہ کشمیر میں بربریت کا مظاہرہ کرتے ہوئے محرم الحرام کا جلوس نہ نکلنے دیا اور عزاداران کو بدترین تشدد بنایا جبکہ نوجوان کو گاڑی تلے روند کر شہید کردیا۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی جاری ہے ، بھارتی فوج نے محرم الحرام کے جلوس میں عزاداران پر تشدد کیا اور پیلٹ گن سےکئی نوجوان کو زخمی کردیا جبکہ درجنوں کشمیری نوجوانوں کو بھی گرفتار کرلیا۔

اس دوران بھارتی فورسز نے ایک نوجوان کو گاڑی تلے روند کر شہید کردیا، اس موقع پر موجود میڈیا  نمائندگان نے کوریج کرنے کی کوشش کی تو بھارتی فورسز کی جانب سے صحافیوں پر لاٹھی چارج کیا گیا اورکیمرے توڑدیئے گئے۔

بھارت کی قابض فورسز کی جانب سے ریاستی دہشت گردی پر حریت رہنماعبدالحمیدلون نے درعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا مقبوضہ کشمیرمیں مذہبی تہوارمنانےکی بھی اجازت نہیں، وادی میں جلوس پربھارتی فوج کاتشدد قابل مذمت ہے۔

عبدالحمیدلون کا کہنا تھا کہ سری نگرمیں بھارتی قابض فوج نےبربریت کی انتہا کردی ہے، نوجوان کوبھارتی فوج نےگاڑی سےکچلنے کی بھی کوشش کی، پیلٹ گن سےکئی نوجوان بری طرح سےشدیدزخمی ہوئے جبکہ بھارتی فوج نےدرجنوں کشمیری نوجوانوں کوگرفتارکیاہے۔

دوسری جانب حریت رہنما کی اہلیہ مشعال ملک نے اپنے بیان میں کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں محرم کے جلوسوں پر پابندی عائد ہے، بھارتی فوج نےلوگوں کو گھروں تک محدود کر رکھا ہے اور مقبوضہ کشمیرمیں مذہبی اجتماعات پر پابندی لگا رکھی ہے۔

مشعال ملک کا کہنا تھا کہ دنیا کے کسی بھی ملک میں مذہبی رسومات پر پاپندی عائد نہیں ہوتی، بھارتی فوج نے ایک نوجوان کو گاڑی تلے روند کر شہید کردیا، کشمیریوں کو اپنی مرضی سے سانس لینے کا حق بھی نہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں