The news is by your side.

Advertisement

ایران میں رضا شاہ پہلوی کی حنوط شدہ لاش برآمد

تہران: ایران میں شاہی مقبرے کی کھدائی کے دوران حنوط شدہ لاش برآمد ہوئی ہے جس کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ یہ پہلوی خاندان کے بانی رضا شاہ پہلوی کی ہے۔

ایرانی حکام کا کہنا ہے کہ عین ممکن ہے حنوط شدہ لاش شاہ ایران رضا شاہ پہلوی کی ہو جنہیں انتقال کے کچھ عرصے بعد مئی 1944ء کو اسی مقام پر دفن کیا گیا تھا، جس کے لیے معروف آرکیٹیکچر نے مقبرہ بھی ڈیزائن کیا تھا۔

حنوط شدہ لاش کی جو تصاویر سوشل میڈیا میں شائع کی گئی ہیں ان میں سے اس لاش کی مماثلت ان تصاویر سے بہت زیادہ ہیں جب رضا شاہ پہلوی کی لاش ایران لاتے وقت کھینچی گئی تھیں۔

ایران کے آخری ولی عہد اور شاہ ایران کے پڑ پوتے نے بھی دعویٰ کیا ہے کہ حنوط شدہ لاش رضا پہلوی کی ہی ہے اس لیے ایرانی حکومت ہمارے خاندان کو لاش تک رسائی دے تاکہ حتمی تصدیق عمل میں لائی جاسکے۔

واضح رہے کہ رضا خان نے 1921ء میں فارس کے قاجار خاندان کی حکومت کا تختہ الٹ کر خود وزیر اعظم بن گئے تھے اور فارس کا نام تبدیل کرکے ایران رکھ دیا گیا تھا، رضا خان نے خود کو شاہ ایران کا لقب دیا اور اپنے خاندان کے لیے پہلوی کی کنیت اختیار کی۔

یاد رہے کہ دوسری جنگ عظیم میں ایران نے جرمنی کا ساتھ دیا، جس پر برطانیہ اور روس کی افواج ایران میں داخل ہوگئیں اور رضا شاہ پہلوی کو اقتدار اپنے بیٹے کو منتقل کرکے مجبوراً بیرون ملک جانا پڑا۔

رضا شاہ پہلوی کا انتقال 1944ء میں افریقہ میں ہوا، جہاں سے کچھ عرصہ مصر میں رکھنے کے بعد ان کی لاش کو خانہ کعبہ کے طواف کے لیے لایا گیا اور بعدازاں ایران میں عبدالعزیم کے شاہی مقبرے کے قریب تدفین عمل میں لائی گئی تھی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں