The news is by your side.

Advertisement

بلدیاتی انتخابات : سندھ ہائیکورٹ نے پی ٹی آئی کی درخواست پر فیصلہ سنا دیا

کراچی : بلدیاتی الیکشن کے شیڈول کے خلاف تحریک انصاف کی درخواست کی سماعت ہوئی اس موقع پر سندھ ہائی کورٹ نے بلدیاتی الیکشن کے انعقاد کیخلاف حکم امتناع کی استدعا مسترد کردی۔

سماعت کے دوران عدالت نے ریمارکس دیے کہ گزشتہ روز فروغ نسیم نے بھی یہی درخواست کی تھی جومسترد کی جاچکی ہے۔

تحریک انصاف کے وکیل کا مؤقف تھا کہ سپریم کورٹ نے سندھ حکومت کو آرٹیکل 140 اے کے تحت الیکشن کرانے کی ہدایت کی، سندھ حکومت ابھی تک بلدیاتی قوانین کوآرٹیکل140اے سے ہم آہنگ نہیں کرسکی۔

وکیل کا کہنا تھا کہ ضلع غربی تقسیم کرکے نیا ضلع کیماڑی تشکیل دیا گیا ہے، اس تقسیم سے ضلع غربی اور کیماڑی کے حلقوں میں تبدیلیاں ہوئی ہیں۔

جسٹس جنید غفار نے کہا کہ آپ نے الیکشن کمیشن اور حکومت کے ساتھ ساتھ پیپلزپارٹی کو کیوں فریق بنایا؟ ، الیکشن کمیشن میں سیکڑوں پارٹیاں رجسٹرڈ ہیں تو ان سب کوفریق کیوں نہیں بنایا؟

جس کے جواب میں وکیل نے کہا کہ پیپلزپارٹی پارٹی سندھ کی حکمران جماعت ہے، انھوں نے بدنیتی پر حلقہ بندیاں کرائیں۔

عدالت نے کہا کہ تمام پارٹیاں الیکشن کا حق رکھتی ہیں، حکومت سندھ کو فریق بنانے کے بعد اس کا جواز نہیں، عدالت کی ہدایت پر درخواست گزار وکیل نے پیپلز پارٹی کا نام درخواست سے نکال دیا۔

عدالت نے دونوں درخواستیں یکجا کرکے سماعت 23جنوری تک ملتوی کردی، یہ درخواست تحریک انصاف کی جانب سے علی زیدی،ارکان اسمبلی سدرہ عمران، رابعہ نظامانی کی جانب سے دائر کی گئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں