The news is by your side.

Advertisement

دنیا کو بیک وقت کئی چیلنجز کا سامنا ہے: منیر اکرم

نیویارک: اقوام متحدہ میں پاکستانی مندوب منیر اکرم کا کہنا تھا کہ معاشی بحالی کے لیے 10 ٹریلین ڈالر کا بندوبست کیا، ترقی پذیر ممالک 10 ٹریلین ڈالر کے ایک حصے کا بھی انتظام نہیں کر سکے۔

تفصیلات کے مطابق اقوام متحدہ میں پاکستانی مندوب منیر اکرم نے کرونا وائرس سے متعلق ویبینار میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ امیر ہو یا غریب سب کو ویکسین تک مساوی رسائی حاصل ہونی چاہیئے۔

منیر اکرم کا کہنا تھا کہ اقتصادی و سماجی کونسل رکن ممالک کو بیک وقت 3 چیلنجز کا سامنا ہے، پہلاچیلنج کرونا وائرس اور نتائج، دوسرا پائیدار ترقیاتی اہداف کا ادراک اور تیسرا آب و ہوا کے وجودی خطرے سے متعلق ہے۔

انہوں نے کہا کہ ترقی یافتہ ممالک نے معاشی بحالی کے لیے 10 ٹریلین ڈالر کا بندوبست کیا، ترقی پذیر ممالک 10 ٹریلین ڈالر کے ایک حصے کا بھی انتظام نہیں کر سکے۔ آئی ایم ایف کے مطابق وبا کا سامنا کرنے اور ترقیاتی اہداف کے لیے 2.5 ٹریلین سے زائد درکار ہیں۔

منیر اکرم کا کہنا تھا کہ اکوسوک مینڈیٹ کی تکمیل ماضی کے مقابلے میں آج سب سے زیادہ ضروری ہے۔

منیر اکرم نے اکوسوک کی بنیادی ترجیحات کا خاکہ پیش کیا جن میں ترقی پذیر ممالک کے لیے خاطر خواہ مالی اعانت اور پائیدار بنیادی ڈھانچےمیں تیز سرمایہ کاری کی ترجیحات شامل ہیں۔

پاکستانی مندوب کا کہنا تھا کہ ترقیاتی اہداف کی تکمیل کے لیے جدید ترین ٹیکنالوجی کا مکمل استعمال کیا جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں