The news is by your side.

Advertisement

مودی بلوچستان کو ایشو بنا کر مسئلہ کشمیر دبانا چاہتے ہیں، سرتاج عزیز

اسلام آباد: مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ بھارتی وزیر اعظم کا بلوچستان سے متعلق بیان پاکستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کی تصدیق ہے،نریندر مودی ایسے بیانات مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم سے توجہ ہٹانے کےلیے دے رہے ہیں۔

Sartaj gives befitting reply to Modi by arynews

مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کے بیان کا کرارا جواب دے دیا۔سرتاج عزیز نے بھارتی وزیر اعظم کی تقریر کے ردعمل میں کہا ہے کہ کشمیرمیں ہزاروں نوجوان حق خود ارادیت کے لیے لڑ رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کشمیریوں کی آواز کو پیلٹ گن کےباوجود بھی نہیں دبا سکتا، نریندر مودی دنیا کی توجہ مسئلہ کشمیر سے ہٹانا چاہتے ہیں، مقبو ضہ کشمیر میں غیر مسلح آزادی کی تحریک چل رہی ہے، کشمیر میں تحریک کا دہشت گردی سے کوئی تعلق نہیں۔ مقبوضہ کشمیر کا آزاد کشمیر سے موازنہ کرنا حقائق کے برعکس ہے۔

اپنے بیان میں سرتاج عزیز نے کہا کہ بھارتی ایجنسی’’را‘‘بلوچستان میں دہشت گردی میں ملوث رہی ہے،نریندر مودی کا بیان اس بات کی ضمانت ہے کہ بھارت بلوچستان میں دہشت گردی کرارہا ہے۔

مشیر خارجہ نے کہا کہ کلبھوشن یادیو کے انکشافات نے بھی بلوچستان میں بھارتی دخل اندازی کی ضمانت دی ہے،مسئلہ کشمیر کا واحد حل پاکستان اور بھارت کے سنجیدہ مذاکرات میں ہی ممکن ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں