The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں امام مسجد اور معذور بیوی کا گھرمیں گھس کر بہیمانہ قتل

ہریانہ: مودی سرکار میں ہندو انتہا پسند غنڈوں نے بھارتی مسلمانوں پرعرصہ حیات تنگ کردیا، ہریانہ میں ہندوانتہاپسندوں نے گھرمیں گھس کر امام مسجداوران کی معذوربیوی کوقتل کردیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت میں ہندوانتہاپسند غنڈوں نے مسلمانوں کیخلاف سفاکیت کی انتہا کردی، بھارتی ریاست ہریانہ میں ہندوانتہاپسندوں نے مسجد کے احاطے میں واقع گھر میں گھس کر بائیس سال کے امام مسجد اوران کی معذوربیوی کوقتل کردیا۔

ہندو انتہا پسند امام مسجد اور ان کی اہلیہ کودھمکیاں دتیے رہتے تھے، متعدد شکایات کے باوجود پولیس نے کوئی نوٹس نہیں لیا۔

مسجد کے امام وخطیب حافظ محمد عرفان اور ان کی اہلیہ ياسمين کی لاش مسجد میں ملی، گاؤں والوں نے پولیس کو واقعے کی اطلاع دی ، جس کے بعد پولیس نے موقع پر پہنچ کر شواہد اکٹھے کرنے شروع کر دیئے اورلاشوں کو اسپتال منتقل کردیا ہے۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق عرفان مسجد میں امامت کرتا تھا اور ان کی اہلیہ ياسمين بھی ان کے ساتھ مسجد میں بنے ایک کمرے رہتی تھی، دونوں کا نکاح ایک سال پہلے ہی ہوا تھا۔

یاد رہے چند روز قبل ہی ہندو انتہا پسندوں نے بھارت کے شہر دہلی میں ساحل نامی ہندو لڑکے کو مسلمان سمجھ کر قتل کردیا تھا، جس کے بعد پولیس نے واقعے میں ملوث دو ملزمان کو گرفتار کرلیا تھا۔

اس سے قبل جولائی میںبھارتی ریاست اترپردیش میں انتہا پسندوں کے ہجوم نے بھارتی فوج سے ریٹائرڈ مسلمان کیپٹن کو بہیمانہ تشدد کرکے قتل کر دیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں