site
stats
سندھ

ظلم و زیادتی دیکھ کر سابقہ پارٹی کو چھوڑا، مصطفیٰ کمال

میر پور خاص : پاک سرزمین پارٹی کے چیئر مین سید مصطفی کمال نے کہا ہے کہ عوام نے تیس سال قربانیاں دیں لیکن عوام کو کچھ نہیں ملا،ظلم اور زیادتی دیکھ کر سابقہ پارٹی کو چھوڑا۔

وہ اپنی پارٹی کے صدر انیس قائم خانی، سیکریٹری جنرل رضاہارون، سینئر وائس چیئر مین انیس احمد ایڈوکیٹ اور وائس چیئرمین اشفاق منگی کے ہمراہ دورے پر میرپور خاص پہنچے تھے اس موقع پرعوام کی کثیر تعداد نے پاک سرزمین پارٹی کے رہنماؤں کا پُرتپاک استقبال کیا اور پھولوں کی پتیاں نچھاور کیں۔

پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفیٰ کمال نے کہا کہ آج کا والہانہ استقبال اللہ کی تائید اور نصرت کی کھلی گواہی ہے میرپورخاص کے لوگوں نے شاندار اور والہانہ استقبال کر کے ہمیں کامیابی سے ہمکنار کر دیا قدرت کا قانون ہے کہ اگر ظلم حد سے بڑھ جائے تو ظالموں کی جگہ نئے لوگ آجاتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ 30 سالوں میں عوام نے اپنی اور آنے والی نسلوں کی قربانی دی لیکن عوام کو کیا ملا،جن کمروں میں بیٹھتے تھے وہاں عوام کی فلاح و بہبود کی کوئی بات نہیں ہوتی تھی ظلم و زیادتی کی انتہا دیکھ کر سابقہ پارٹی سے علیحدہ ہوئے۔

سید مصطفی کمال نے کہا کہ ہم نے تمام عہدوں اور آسائشوں کو عوام کی خاطر ٹھکرایا اور عوام کی خاطر ہی ہم واپس آئے ہیں، ہم نے وقت کے فرعونوں کو للکارا اور اپنی زندگیاں داوٴ پر لگائیں کر آنے والی نسل کو تحفظ دینے کی کوشش کی،ہم نے سچ کہہ دیا اس لیے ہم کامیاب ہیں ماننا نہ ماننا عوام کا کام ہے ہم سے نہ ماننے والوں کا سوال نہیں ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ آج کا منظر محبتیں بانٹنے کا نتیجہ ہے جن لوگوں نے ہم پر پتھر مارے وہ آج ہمارے قافلے کا حصہ ہیں کارکنان کو ہمت، حوصلے اور صبر پر خراج تحسین پیش کرتا ہوں کارکنان کھلے دل سے سب کو معاف کریں اور عاجزی اختیار کریں سیاسی مخالفین کو گلے لگائیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پاک سرزمین پارٹی کے رہنماوٴں نے اقتدار اور طاقت کی قربانی دی ہے، وہ لوگ جو ہمیں قوم کے باپ کا غدار کہتے ہیں اسی باپ کے کہنے پر استفی دینے کے لیے تیار نہیں ہیں ہم اس ملک کے لوگوں کی آپس کی نفرت، فرقہ واریت اور نسل پرستی کو ختم کردیں گے۔

مصطفیٰ کمال نے اپیل کی کہ 23 دسمبر کو عوام حیدرآباد پکا قلعہ جلسے میں شرکت کریں اور دیگرلوگوں کو بھی اپنے ہمراہ وطن پرستی کی جدوجہد میں شامل ہونے کی دعوت دیں، انہوں نے وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ میر پور خاص سے کراچی جانے والی ٹرین کو عوامی مفاد میں بحال کریں۔

قبل ازیں پاک سرزمین پارٹی کے صدر انیس قائم خانی نے عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج کا دن ہر لحاظ سے تاریخی دن ہے ہمارے ساتھ چند نادان لوگوں نے جو کیا اسی وقت ان کو معاف کر دیا تھااور آج انہی لوگوں نے ہمارا پرجوش اور تاریخی استقبال کر کے ثابت کر دیا کہ گمراہی کے بت ٹوٹ چکے ہیں،ہم محبتیں بانٹنے کے لیے آئے ہیں۔

انیس قائم خانی نے کارکنان کو ہدایت کی کہ نفرتیں ختم کر کے محبتیں بانٹیں، ہم کراچی سے کشمور تک عوام کے مسائل کا حل چاہتے ہیں اس لیے عوام کے حقوق کے لیے 2018 تک نہیں رکیں گے اور اپنے عوام کے ساتھ مل کر ان کے حقوق کے حصول کے لیے جدوجہد کریں گے۔

اجتماع سے پی ایس پی کے سیکریٹری جنرل رضا ہارون نے بھی خطاب کیا انہوں نے کہا کہ میر پور خاص میں پاک سر زمین پارٹی کے امتحانوں کا آغاز ہوا تھا اور آج صرف 8 ماہ کی جدوجہد کے بعد عوام نے بھرپور محبت دی اور محبت کے پیغام کو آگے پہنچایا اس پر ان کے شکر گزار ہیں۔

دریں اثناء پی ایس پی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے صدر انیس قائم خانی اور دیگر مرکزی رہنماؤں کے ہمراہ قائداعظم گیٹ پر پرچم کشائی کی اور مہاجر کالونی چوک سیٹلائیٹ ٹاوٴن میں اپنے مرکزی دفتر کا افتتاح بھی کیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top