The news is by your side.

Advertisement

قومی اسمبلی اجلاس میں گرما گرمی، وزیرِ خزانہ کے بیان پر اپوزیشن کا واک آؤٹ

اسلام آباد: قومی اسمبلی کے اجلاس میں وزیرِ خزانہ اسد عمر کے بیان پر ماحول گرم ہو گیا، بیان پر اپوزیشن بھڑک اٹھی اور اجلاس سے واک آؤٹ کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیرِ خزانہ اسد عمر کی جانب سے جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کو گم راہ کہنے پر اپوزیشن نے احتجاج کرتے ہوئے قومی اسمبلی سے واک آؤٹ کیا۔

گمراہ کوئی غیر پارلیمانی لفظ نہیں ہے: شاہ محمود قریشی

اسد عمر نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن کو کسی نے کوئی غلط خبر دی اور میرے والد صاحب کے بارے میں گم راہ کیا ہے، یہ کہہ کر وہ ایوان سے چلے گئے۔

تاہم جے یو آئی ف کے اراکین نے اسد عمر کے الفاظ پر ایوان میں احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کے بارے میں نازیبا الفاظ استعمال کیے گئے۔

وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی نے وضاحت کی کہ گم راہ کوئی غیر پارلیمانی لفظ نہیں ہے، تاہم اپوزیشن پھر بھی شور شرابا کرتی رہی، خورشید شاہ نے کہا جب تک وزیرِ خزانہ نہیں آتے بحث میں حصہ نہیں لیں گے۔


یہ بھی پڑھیں:  ن لیگ نے مولانا فضل الرحمان کو اکیلا چھوڑ دیا، شریف برادران کا اے پی سی میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ


دسری طرف اپوزیشن کے واک آؤٹ پر وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری اپوزیشن پر گولہ باری کرتی رہیں۔

خیال رہے کہ مولانا فضل الرحمان نے حکومت کے خلاف آل پارٹیز کانفرنس بلا رکھی ہے، جس میں اپوزیشن جماعتوں کے وفود شرکت کریں گے تاہم پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کے سربراہان نے بہ ذاتِ خود شریک نہ ہونے کا فیصلہ کر لیا ہے جس کے بعد مولانا فضل الرحمان تنہا ہو گئے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں