The news is by your side.

Advertisement

جعلی اکاؤنٹ کیس، نوڈیرو ہاؤس کے انچارج ندیم بھٹو گرفتار

اسلام آباد: جعلی بینک اکاؤنٹ کیس میں جے آئی نے بڑی کارروائی کرتے ہوئے نوڈیرو ہاؤس کے انچارج ندیم بھٹو کو گرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق جعلی اکاؤنٹ کیس میں نیب جے آئی ٹی نے نوڈیرو ہاؤس میں چھاپہ مار کر نوڈیرو ہاؤس کے انچارج ندیم بھٹو کو گرفتار کرلیا، ندیم بھٹو کو آصف زرداری کا قریبی ساتھی بتایا جارہا ہے۔

نیب ذرائع کے مطابق ندیم بھٹو نے جعلی بینک اکاؤنٹس سے رقم نکلوائی، ندیم بھٹو کا نام جے آئی ٹی رپورٹ میں درج ہے، چھاپے کے وقت نیب ٹیم کے ساتھ سیکیورٹی ادارے بھی موجود تھے۔

نیب کے مطابق ملزم ندیم بھٹو اس وقت نیب سکھر کی تحویل میں ہے، ملزم کو کل احتساب عدالت سکھر میں ریمانڈ کے لیے پیش کیا جائے گا۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز بابو اقبال کے مطابق ملزم ندیم بھٹو کا بھائی جبار بھٹو فیملی کا ذاتی فوٹو گرافر تھا، جبار بھٹو کی وائٹ ہاؤس میں آصف زرداری، بینظیر بھٹو، سابق امریکی صدر بش کے ساتھ فوٹو موجود ہے۔

مزید پڑھیں: جعلی اکاؤنٹس کیس، آصف زرداری کی فرنٹ کمپنی کا منیجرگرفتار

نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ ندیم بھٹو کے اکاؤنٹ میں اومنی گروپ کے علاوہ گم نام اکاؤنٹس سے پیسے آتے تھے، پیسوں سے نوڈیرو ہاؤس کے ملازمین کی تنخواہیں، کھانے کے اخراجات چلتے تھے، سفری اخراجات، نوڈیرو ہاؤس میں تقریبات کے انتظامات انہی پیسوں سے ہوتے تھے۔

ندیم بھٹو کے بھائی عبدالجبار بھٹو 1988 میں بینظیر بھٹو کے ہمراہ اسلام آباد منتقل ہوگئے تھے، جبار بھٹو کو محکمہ اطلاعات میں بڑے عہدے پر نوکری دی گئی تھی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اومنی گروپ کو 5 سے 7 اکاؤنٹ کے ذریعے بڑی رقوم منتقل کی گئیں، ندیم بھٹو کی گرفتاری کے بعد لاڑکانہ میں مزید گرفتاریوں کا امکان ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں