The news is by your side.

Advertisement

30 کروڑ کامنصوبہ 3ارب روپے تک کیسے پہنچا؟ احسن اقبال کے گرد گھیرا مزید تنگ

اسلام آباد : قومی احتساب بیورو ( نیب ) نے مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیر داخلہ احسن اقبال کےگردگھیرا مزیدتنگ کرنے کا فیصلہ کیا ہے، 30 کروڑ کامنصوبہ 3ارب روپے تک کیسے پہنچا،سوالات اٹھ گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق نیب راولپنڈی نے مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیر داخلہ احسن اقبال کےگردگھیرا مزیدتنگ کرنےکا فیصلہ کرلیا ہے ، ذرائع کا کہنا ہے کہ ناروال اسپورٹس سٹی پراجیکٹ کا تمام ریکارڈ نیب راولپنڈی کو موصول ہوگئے ہیں ،جس کے بعد 30 کروڑ کامنصوبہ 3ارب روپے تک کیسے پہنچا،سوالات اٹھ گئے۔

نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ 30 کروڑکےمنصوبےکی لاگت بےضابطگیوں سے3ارب تک پہنچی جبکہ منصوبے پر ایف آئی اے میں جاری تحقیقات نیب نے اپنے سپرد لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

ذرائع کے مطابق ایف آئی اےبھی نارووال اسپورٹس سٹی منصوبے پرتحقیقات کررہی تھی، مختلف اداروں کے افسران سے تفتیش کا عمل بھی مکمل کرچکے ہیں ، تحقیقات کی روشنی میں اداروں سے مزید تفصیلات طلب کی جائیں گی۔

مزید پڑھیں : نارووال اسپورٹس سٹی کرپشن کیس : ن لیگی رہنما احسن اقبال سے تفتیش مکمل

یاد رہے کہ رواں سال جولائی میں نیب نے اسپورٹس سٹی کرپشن کیس میں مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما احسن اقبال سے تفتیش مکمل کی تھی، احسن اقبال نے نیب کی جانب سے موصول ہونے والے سوالنامے کا بھی جواب جمع کرایا تھا جبکہ قومی احتساب بیورو کی ٹیم نے اُن سے کرپشن سے متعلق پوچھ گچھ بھی کی تھی۔

دوسری جانب رواں سال جولائی میں وزیراعظم کےقائم انکوائری کمیشن کواحسن اقبال کےخلاف پہلاکیس بھی موصول ہوا تھا، دستاویز کےمطابق احسن اقبال نےقومی خزانےکوسترارب کانقصان پہنچایا، احسن اقبال کے خلاف مبینہ کرپشن کاکیس وفاقی وزیر مواصلات مرادسعیدکی جانب سےبھیجاگیا تھا۔

دستاویزات میں کہا گیا تھا کہ احسن اقبال نےقومی خزانےکو مبینہ طور پر50سے70ارب کانقصان پہنچایا،2015میں بولی کےبعدٹھیکےسےپہلےہی کمپنی سے2013میں ایم اویوکیاگیا، ذرائع کا کہنا تھا کہ انکوائری کمیشن نےدستاویزکاجائزہ لیناشروع کردیا اور ضرورت پڑنےپر حکام احسن اقبال کوطلب کرسکتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں