The news is by your side.

Advertisement

ناسا نے سورج کی ناقابل یقین ویڈیو جاری کر دی

واشنگٹن: امریکی خلائی ادارے دی نیشنل ایروناٹکس اینڈ اسپیس ایڈمنسٹریشن (ناسا) نے سورج کی ایک ایسی ویڈیو جاری کی ہے جو نہایت شان دار ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق ناسا (NASA) نے ایک ایسی ناقابل یقین ویڈیو جاری کی ہے جس میں سورج کی حیرت انگیز 4 ہزار پکسلز میں 10 سال کا وقفہ دکھایا گیا ہے، ویڈیو میں پچھلے 10 سالوں کے ہر دن کے لیے ایک سیکنڈ میں سورج کی ایک تصویر دکھائی گئی ہے، اس طرح سورج کی پوری ایک دہائی کو 61 منٹ میں قید کر دیا گیا ہے۔

ناسا کی اس ویڈیو میں سورج پر گزرنے والے گزشتہ دس سال کا عرصہ دکھایا گیا ہے، ویڈیو میں سورج شان دار طریقے سے گھومتا دکھائی دیتا ہے، یہ ویڈیو ناسا نے خلا میں اپنی سولر ڈائنامکس آبزرویٹری کے دس سال پورے ہونے پر ریلیز کی ہے۔

یہ تصاویر ناسا کی آبزرویٹری (SDO) سے آئے ہیں، یہ ایک خلائی جہاز ہے جسے فلوریڈا میں کیپ کیناورل ایئر فورس اسٹیشن سے دس سال قبل روانہ کیا گیا تھا، زمین کے گرد گھومتے ہوئے اس نے سورج کی 42 کروڑ 50 لاکھ ہائی ریزولوشن تصاویر جمع کیں، جو 2 کروڑ گیگابائٹس پر مشتمل ڈیٹا تھا۔

اس ویڈیو کو ‘سورج کے دس سال’ کا عنوان دیا گیا ہے، جس میں ایک گھنٹے تک سورج کا تاج ناقابل یقین تفصیل کے ساتھ گھومتا ہے، چمکتا اور حرارت سے دمکتا ہے۔ آبزرویٹری نے ان تصاویر میں سورج کی اوپری سطح پر شمسی اثرات کو مرتب کیا ہے، جن میں عظیم لہریں، بڑے سوراخ اور مقناطیسی دھماکے شامل ہیں، یہ سب اس ویڈیو میں دکھایا گیا ہے۔

ناسا کا کہنا تھا کہ اب جون 2020 میں بیٹھ کر کوئی بھی سورج کے ایک عشرے پر مبنی عرصے کو بغیر رکے دیکھ سکتا ہے۔ ویڈیو میں سورج کے 11 سالہ شمسی چکر کے دوران سورج کی سرگرمی میں عروج و زوال بھی دیکھا جا سکتا ہے کہ کب یہ بہت زیادہ متحرک ہوا اور کب کم متحرک۔ اس دوران اہم واقعات بھی نوٹ ہوئے ہیں جیسا کہ سیاروں کا سامنے سے گزرنا اور آتش فشانی کے واقعات۔

ویڈیو بغور دیکھنے والے چند خصوصی مہمان سیاروں کو بھی دیکھ سکیں گے، 12:20 پر جون 2012 کو وینس تیزی کے ساتھ سورج کے سامنے گزرا تھا، جب کہ چاند 53:30 پر سورج کی ویڈیو میں خلل ڈالتا دکھائی دیتا ہے، یہ واقعہ گزشتہ برس مارچ کا ہے۔ ویڈیو شروع ہونے کے صرف 57 سیکنڈز کے بعد ہی ہلتی دکھائی دیتی ہے، اس کی وضاحت ناسا نے نہیں کی ہے، جب کہ 38 ویں منٹ پر کیمرا ہی آف لائن ہو جاتا ہے۔

ناسا کا کہنا ہے کہ ویڈیو جب بالکل سیاہ ہو جاتی ہے تو یہ دراصل زمین اور چاند کے خلائی جہاز اور سورج کے درمیان آنے کی وجہ سے ہوئی تھی، 2016 میں آبزرویٹری کے آلات میں کچھ خرابی آئی تھی جس کی وجہ سے بھی ویڈیو میں ایک خلا آتا دکھائی دیتا ہے، مذکورہ خرابی ایک ہفتے بعد ٹھیک کر دی گئی تھی۔ یہ ویڈیو آبزرویٹری کے تین آلات کی مدد سے ممکن بنائی گئی ہے جو دس سال بعد اب بھی اچھی طرح سے کام کر رہے ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں